قائد ایم کیو ایم کی تقریر کے خلاف جڑواں‌ شہروں میں مظاہرے -
The news is by your side.

Advertisement

قائد ایم کیو ایم کی تقریر کے خلاف جڑواں‌ شہروں میں مظاہرے

روالپنڈی/اسلام آباد: قائد ایم کیو ایم کی ملک کے خلاف متنازعہ تقریر کے  معاملے پر جڑواں شہروں میں مظاہرے کیے گئے اور برطانوی حکومت سے قائد ایم کیو ایم کو پاکستان حوالے کرنے کا مطالبہ کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق نیشنل پریس کلب اسلام آباد کے باہر جماعت اسلامی، تحریک انصاف کی ذیلی تنظیم انصاف ٹائیگرز فورس کے علاوہ آئل اینڈ گیس ڈویلپمنٹ کے ملازمین سمیت پاکستان سنی تحریک کی جانب سے مظاہرے کیے گئے۔

اس موقع پر جماعت اسلامی کے نائب امیر میاں محمد اسلم، زبیر فاروق اور دیگر مقررین نے کہا کہ ’’قائد ایم کیو ایم خود مردہ باد ہیں، پاکستان زندہ باد تھا اور رہے گا، مقررین نے خطاب کرتے ہوئے مزید کہا کہ ’’ملک کے خلاف اس طرح کی ہزرہ سرائی بغاوت ہے اور پاکستانی عوام کسی صورت ملک کے خلاف کوئی نازیبا الفاظ برداشت نہیں کرے گی‘‘۔

پڑھیں:  لندن میں مقیم پاکستانیوں کا قائد ایم کیو ایم کی تقریر کے خلاف مظاہرہ

مظاہرین نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ ’’گزشتہ روز میڈیا ہاؤسز پر حملے اور ملک کے خلاف نازیبا الفاظ استعمال کرنے والے افراد کے خلاف کارروائی کی جائے، پاکستان سنی تحریک کی جانب سے راولپنڈی پریس کلب کے باہر مظاہرہ کیا گیا اور قائد ایم کیو ایم کے پتلے نذر آتش کیے گئے۔ مظاہرین نے قائد ایم کیو ایم کو پھانسی دینے کا بھی مطالبہ کیا گیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں