جنوبی پنجاب کے وکلاء کا چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ کے فیصلے پر احتجاج
The news is by your side.

Advertisement

ملتان، وکلاء کا چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ کے فیصلے پر احتجاج

ملتان: چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ کی جانب سے وکلاء کے خلاف بنائی جانے والی ایڈوائزری کمیٹی کے خلاف وکلا نے احتجاج کیا اور نعرے بازی بھی کی، وکلاء کا کہنا تھا کہ ججز کی تعیناتی کے مسئلے میں جنوبی پنجاب کے وکیلوں کو نظر انداز کیا جارہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ملتان کے وکلاء نے چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ کی جانب سے وکلا کے خلاف بنائی جانی والی ایڈوائزی کمیٹی کے خلاف احتجاج کیا اور نعرے بازی کی۔

مظاہرہ کرنے والے وکلا کا کہنا تھا کہ ججز کی تعیناتی کے مسئلے پر بھی جنوبی پنجاب سے تعلق رکھنے والے سینئیر وکلا کو میرٹ پر ہونے کے باوجود نظر انداز کیا گیا ہے اور اب ایڈوائزری کمیٹی بنا کر احتجاج کا حق بھی چھین لیا گیا۔

وکلا کا کہنا تھا کہ حق مانگنے پر ہمارے لائسنس منسوخ کیے جارہے ہیں، مظاہرین نے مطالبہ کیا کہ ایڈوائزی کمیٹی غیر قانونی اقدام ہے اسے فوری ختم کیا جائے اور جنوبی پنجاب کے وکلا کے مطالبات فوری طور پر تسلیم کیے جائیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں