The news is by your side.

Advertisement

لیڈز: مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کے خلاف ملینیم اسکوائر میں احتجاج

لیڈز: مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کے خلاف برطانوی شہر لیڈز کے ملینیم اسکوائر میں احتجاجی مظاہرہ کیا گیا، جس میں پارلیمنٹ اراکین سمیت سیکڑوں لوگوں نے شرکت کر کے بھارتی اقدامات کو مسترد کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق لیڈز سِوک ہال کے باہر مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کے خلاف زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا گیا، احتجاجی مظاہرے میں لیڈز کے شیڈو وزیر رچرڈ برگن اور فیبین ہملٹن نے بھی شرکت کی۔

مظاہرے میں لیڈز کے شیڈو وزیر سمیت لوکل ممبران پارلیمنٹ، سیاسی ایکٹویسٹس، انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والوں اور کشمیریوں کی بڑی تعداد شریک ہوئی، شرکا نے کشمیر کے ساتھ اظہار یک جہتی کیا۔

مظاہرے میں شریک ہونے والے پارلیمنٹ اراکین میں آلیکس ڈیوڈ سوبیل اور ہیلری بین شامل تھے، مظاہرے میں بچے، بوڑھے، جوان اور خواتین نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔

یہ بھی پڑھیں:  مقبوضہ کشمیر میں کرفیو کا 41 واں روز، انسانی حقوق کی پامالی عروج پر

مظاہرین نے کشمیر کی آزادی کے حق میں نعرے لگائے۔ لیڈز کی فضائیں مودی دہشت گرد کے نعروں سے بھی گونج اُٹھیں۔

شرکا نے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کی شدید مذمت کی، مقبوضہ کشمیر سے کرفیو کے خاتمے اور وادی کی حیثیت بحال کرنے کا مطالبہ کیا۔

واضح رہے کہ بھارت کی جانب سے آرٹیکل 370 اے ختم کرنے کے بعد مقبوضہ کشمیر میں کرفیو نافذ ہوئے 41 دن ہو گئے ہیں، اس دوران وادی میں کرفیو کے باعث 3 ہزار 9 سو کروڑ کا نقصان ہو چکا ہے، انسانی حقوق کی پامالی عروج پر ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں