The news is by your side.

کراچی میں 6سالہ بچی سے زیادتی وقتل کیخلاف احتجاج، ایک شخص جاں بحق،15زخمی

کراچی : شہر قائد میں  چھ سالہ بچی کے زیادتی وقتل کے واقعے کیخلاف بچی کے اہلخانہ اور اہل علاقہ کی بڑی تعداد نے اورنگی ٹاون منگھوپیر روڈ پر احتجاج کیا ،پتھراؤاورپرتشدد واقعات میں ایک شخص جاں بحق،15زخمی ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں چھ سالہ رابعہ کو زیادتی اور بد ترین تشدد کے بعد بے دردی سے قتل کر دیا گیا، اورنگی ٹاؤن میں بچی کی لاش ملنے پر علاقہ مکین مشتعل ہوگئے اور بچی کی لاش سڑک پررکھ کر احتجاج کیا،اہل علاقے نے مطالبہ کیا کہ حوا کی ننھی کلی کو درنگی کا نشانہ بنانے والے ملزمان کو سخت سے سخت سزا دی جائے۔

پولیس کی بھاری نفری علاقے میں پہنچی اور مظاہرین سے بات کرنے کی کوشش کی لیکن مذاکرات ناکام ہوئے، پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے ہوائی فائرنگ اورلاٹھی چارج کیا تو مشتعل مظاہرین نے بھی پولیس پر پتھراؤ کیا، دکانیں بند کرائیں اور روڈ کے بیچ ٹینٹ لگا کر سڑک بلاک کردی۔

مظاہرین نے پتھراؤ کرکے متعدد گاڑیوں کے شیشے بھی توڑ دیے، پتھراؤ اور پرتشدد واقعات میں گولی لگنے سے ایک شخص جاں بحق جبکہ دس پولیس اہلکاروں سمیت پندرہ افرادزخمی ہوگئے جبکہ پولیس نے متعدد مظاہرین کو گرفتارکرلیا۔

ایس پی اورنگی عابدبلوچ کا کہنا ہے کہ مقتول بچی کے والد سے رابطےکی کوشش کررہےہیں، والدین بچی کی لاش لےکر گھر چلے گئے، کٹی پہاڑی کی سڑک کو ٹریفک کےلیےبحال کردیاگیا، بند دکانوں کو بھی کچھ دیرمیں کھول دیاجائیگا، بچی کے والد سے مذاکرات کرکے مظاہرہ ختم کرایا جائے گا۔

جاں بحق ہونے والا پی ٹی آئی کا کارکن

پی ٹی آئی کےرہنما عمران اسماعیل نےدعویٰ کیاہے جاں بحق ہونے والا پی ٹی آئی کا کارکن تھا، پی ٹی آئی کارکن الیاس پولیس کی فائرنگ سےجاں بحق ہوا، الیاس بچی کےاغواکےبعدقتل پراحتجاج کررہا تھا، سندھ حکومت اس موت کی ذمے دار ہے، سائیں سرکارسب سے بیکار۔

ایگزیکٹیوڈائریکٹرجناح اسپتال سیمی جمالی کا کہنا ہے کہ مظاہرےمیں زخمی شخص دوران علاج دم توڑ گیا، جاں بحق شخص کی شناخت عبدالرحمان کےنام سےہوئی، زخمی شخص کوسرپرگولی لگی تھی۔

یاد رہے کہ چھ سالہ بچی تین روز قبل اورنگی ٹاؤن سے لاپتہ ہوئی تھی، گزشتہ روز بچی کی لاش منگھوپیر میں کچرا کنڈی سے ملی۔

پولیس نے جنہیں گرفتار کیا ہے وہ اصل ملزم نہیں، رابعہ کی والدہ کا دعویٰ

رابعہ کی والدہ نے انصاف کی فراہمی کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ میری بیٹی پر بدترین تشدد اور زیادتی کی گئی، پولیس نے جنہیں گرفتار کیا ہے وہ اصل ملزم نہیں۔

پوسٹ مارٹم رپورٹ میں بچی سےزیادتی ثابت، اسپتال ذرائع

عباسی شہید اسپتال ذرائع کے مطابق پوسٹ مارٹم رپورٹ میں بچی سےزیادتی ثابت ہوئی ، لاش کاپوسٹ مارٹم عباسی شہیداسپتال میں لیڈی ایم ایل اونے کیا چی کوگلےمیں پھنداڈال کرقتل کیاگیا، رابعہ کےجسم کےمختلف حصوں پرزخم کےنشانات پائےگئے۔

وزیر داخلہ سندھ سہیل انور سیال کا بچی سے زیادتی و قتل کا نوٹس

دوسری جانب وزیر داخلہ سندھ سہیل انور سیال نے منگھوپیر واقعے اور مظاہرے کےدوران ایک شخص کی ہلاکت کا نوٹس لیتے ہوئے ایڈیشنل آئی جی کراچی کو واقعے سے متعلق رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت دے دی ہے۔

وزیر داخلہ سندھ کا کہنا ہے والدین سے پوچھا جائےتدفین کیلئے جاتے ہوئےکس نے روکا؟ایف آئی آراندراج کے بعداحتجاج کرنے کیلئے کس نے کہا؟ پولیس مکمل تعاون اور واقعے کی ہر پہلو سے انکوائری کررہی ہے۔

  اورنگی میں بچی سےزیادتی اور قتل  ، سیاسی رہنماؤں کا واقعے پر  شدیدغم وغصےکااظہار

ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما خواجہ اظہار نے اورنگی میں بچی سےزیادتی اور قتل پر شدیدغم وغصےکااظہار کرتے ہوئے کہا کہ قاتل کو فوری گرفتار کر کے عبرتناک سزا دی جائے۔

خواجہ اظہار نے مقتول بچی کے لواحقین پر فائرنگ اور لاٹھی چارج کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ فائرنگ کرنےوالےاہلکاروں کےخلاف انکوائری کی جائے۔

ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ فاروق ستار کی جانب سے اورنگی میں بچی سے زیادتی و قتل پرغم وغصے کااظہار کرتے ہوئے کہا کہ لواحقین پرپولیس تشدد،لاٹھی چارج کی مذمت کرتے ہیں، حکومت سندھ معصوم بچی کےقاتلوں کوجلدازجلدگرفتارکرے، ملک میں بچوں سےزیادتی وقتل کے واقعات میں اضافہ ہورہاہے۔

تحریک انصاف کی جانب سے بھی منگھوپیرمیں زیادتی کے بعد بچی کےقتل کی مذمت کرتے ہوئے فردوس نقوی اور خرم شیرزمان نے پی ٹی آئی کارکن کی ہلاکت پر اظہارافسوس کیا۔

خرم شیرزمان نے کہا کہ پولیس ملزم کوپکڑنےکےبجائےمظاہرین پرگولیاں برسارہی ہے، پارٹی کارکنان پرامن رہیں،خون کےایک ایک قطرےکاحساب لیں گے، اب تحریک انصاف بتائےگی کہ عوام کی طاقت کیاہوتی ہے۔

سربراہ پی ایس پی مصطفیٰ کمال نے اورنگی ٹاؤن میں بچی سے زیادتی و قتل پراظہارافسوس کیا اور کہا کہ لواحقین پرپولیس کےلاٹھی چارج کی مذمت کرتے ہیں، داد رسی کےبجائے پولیس کالاٹھی چارج نا قابل برداشت ہے، سندھ حکومت واقعےمیں ملوث افراد کوگرفتار کرے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں