The news is by your side.

Advertisement

مودی کے یاروں کوبِلوں سے گھسیٹ کرنکالیں گے،وزیراعلیٰ بلوچستان

کوئٹہ : بھارتی مداخلت اور وزیراعظم نریندر مودی کے شرمناک بیان کے خلاف بلوچستان کے عوام سراپا احتجاج ہیں،احتجاجی مظاہروں سے وزیراعلیٰ بلوچستان اوروزیرداخلہ بلوچستان نے بھی خطاب کیا۔

بھارت مداخلت کے خلاف بلوچستان کے مختلف شہروں میں احتجاجی مظاہرے کیے جارہے ہیں،مظاہرین نے بھارت کے خلاف نعرے لگائے اورکئی مقامات پر بھارتی پرچم اور مودی کے پتلے بھی نذر آتش کیے گئے،مظاہروں کااہتمام سیاسی جماعتوں،سول سوسائٹی اورشہریوں نےکیا۔

balochistan-post-1

احتجاجی مظاہروں سے خطاب کرتے ہوئے بلوچستان کے صوبائی وزیرداخلہ سرفرازبگٹی نے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے پہلے ہی بلوچستان میں را کی کارروائیوں کی اطلا ع دی تھی لیکن کسی نے یقین نہیں کیا تھا تا ہم اب مودی کے بیان نے ثابت کردیا ہے کہ بلوچستان میں دہشت گردی کون کروا رہا ہے۔

balochistan-post-2

اس موقع پروزیرداخلہ بلوچستان نے نہ صرف مودی کی متعصبانہ حکومت کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا بلکہ مظاہرین کے شرکاء سے مودی سرکار کے خلاف نعرے بھی لگوائے۔

بعد ازاں وزیراعلیٰ بلوچستان ثناء اللہ زہری نے بھی مظاہرین سے خطاب کیا انہوں نے دوٹوک انداز میں کہا کہ بلوچستان میں دہشت گردی کی کارروائیوں میں بھارتی خفیہ ایجینسی را ملوث ہے۔

balochistan-post-4

بھارتی وزی اعظم نریندرمودی کی جانب سے بلوچستان کے حوالے سے دیے گئے بیان کی سخت الفاط میں مذمت کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ بلوچستان نے باور کرایا کہ ہم آج سے نہیں 500سال سے دھرتی کے وارث ہیں ہمارے آباؤ اجداد نے پاکستان کے ساتھ الحاق کیا تھا،بلوچستان کے اصل وارث ہم ہیں غیرملک میں بیٹھے غدار بلوچ سردار نہیں۔

balochistan-post-3

اس موقع پرانہوں نے کہا کہ براہمداغ ،حیربیارمری اور دیگر بھارت سے فنڈز لےرہےہیں کیا تم لوگ بلوچستان کونام نہاد آزادی دلا ہندو کی غلامی میں دینا چاہتے ہو؟ تم ہندوؤں سے چند ٹکوں کیلیے بلوچستان میں اپنے بھائیوں کو شہید کراتے ہو۔

وزیر اعلیٰ بلوچستان ثناء اللہ ذہری نے اس عزم کا اظہار کیا کہ دہشت گرد جہاں بھی ہوں گے بلوں سے نکال کر باہر لائیں گے چاہے اس کے لیے کیسی بھی قربانی کیوں نہ دینی پڑے،مجھ سےمیرابیٹا،بھتیجااور بھائی چھین لیاگیا ہے لیکن پھر بھی میں کبھی دہشت گردوں کےخلاف ہارنہیں مانوں گا۔

آخر میں وزیر اعلیٰ بلوچستان نے نریندر مودی کے بیان پر مذمتی بیان پڑھ کر سنائی جسے مظاہرے کے شرکاء نے اتفاق رائے سے منظور کر لیا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں