psl پی ایس ایل : اسلإم آباد یونائیٹڈ نے ٹاس جیت لیا، کراچی کنگز کو بیٹنگ کی دعوت
The news is by your side.

Advertisement

اسلام آباد یونائیٹڈ نے کراچی کنگزکو8 وکٹوں سے شکست دے دی

شارجہ : پی ایس ایل تھری کے پندرہویں میچ میں اسلام آباد یونائیٹڈ نے کراچی کنگز کو 8 وکٹوں سے شکست دے دی، مصباح الیون نے 154 رنز کا ہدف صرف دو وکٹوں کے نقصان پر17.2 اوور میں حاصل کرلیا۔

 تفصیلات کے مطابق شارجہ کرکٹ اسٹیڈیم میں کھیلے جانے والے پاکستان سپرلیگ کے تیسرے ایڈیشن کے پندرہویں میچ میں اسلام آباد یونائیٹڈ کے کپتان مصباح الحق نے ٹاس جیت فیلڈنگ کا فیصلہ کیا تھا۔

اسلام آباد یونائیٹڈ کے لک رونچی کی شاندار کارکردگی کے باعث کراچی کنگز کو پی ایس ایل تھری میں پہلی شکست کا سامنا کرنا پڑا، اسلام آباد یونائیٹڈ نے میچ 8 وکٹ سے جیت لیا، لک رونچی مین آف دی میچ قرار پائے، انہوں نے 37 بال پر 71 رنز اسکور کیے۔

پہلے کھیلتے ہوئے کراچی کنگز نے مقررہ 20 اوورز میں چھ وکٹ پر 151 رنز بنائے، کراچی کنگز کے خرم منظور اور بابر اعظم نے نصف سنچریاں اسکور کیں، بابر اعظم 55 اورخرم منظور 51 رنزکے ساتھ نمایاں رہے، دونوں نے 101 رنز کی شراکت جوڑی۔

محمد رضوان 9 گیندوں پر21رنز بنا کرناٹ آؤٹ رہے جبکہ اسلام آباد یونائیٹڈ کی جانب سے فہیم اشرف تین وکٹوں کے ساتھ کامیاب ترین بولر رہے جبکہ محمد سمیع اور حسین طلعت نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔

کراچی کنگز کے 154 رنز کے ہدف کے تعاقب میں ٹیم اسلام آباد کے اوپنرز نے عمدہ کارکردگی کا مظا ہرہ کیا، لک رونچی اور جے پی ڈومنی کی جارحانہ بیٹنگ نے میچ کراچی کنگز سے چھین لیا۔

رانچی نے دھواں دھار ففٹی اسکور کی، ڈومنی کے43 اور آصف علی کے26رنز کی بدولت اسلام آباد یونائیٹڈ نے ہدف 17.2 اوورز میں حاصل کرلیا، کراچی کنگز کی جانب سے محمد عامر اور عرفان جونیئر نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔

واضح رہے کہ فتوحات کا سلسلہ جاری رکھنے والی ٹیم کراچی کنگز کے اب تک لیگ میں پانچ میچز ہوئے جن میں سے ملتان سلطان کے خلاف ہونے والا مقابلہ بارش کی نذر ہوا تین میچوں میں کھلاڑیوں نے شاندار کھیل پیش کرتے ہوئے ٹیم کو فتح سے ہمکنار کروایا جبکہ پانچویں میچ میں اسلام آباد یونائیٹڈ سے کراچی کنگز کو پہلی بار شکست کا سمنا کرنا پڑا۔

پی ایس ایل کے تیسرے ایڈیشن میں پوائٹس ٹیبل پر سات پوائنٹس کے ساتھ اسلام آباد یونایئٹڈ پہلے اور سات پوائنٹس کے ساتھ  کراچی کنگز کی ٹیم دوسرے نمبر پر موجود ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

 اسلام آباد یونائیٹڈ کی اننگز

اٹھارہواں اوور : 

اسلام آباد یونائیٹڈ کے آصف علی نے اوور کی دوسری بال پر چھکا لگا کر اپنی ٹیم  کو فتح دلادی ، اسکور 156 ہوگیا، اس طرح اسلام آباد یونائیٹڈ نے کراچی کنگز کو 8 وکٹوں سے ہرا دیا۔

سترہواں اوور : 

اس اوور میں ڈومنی اور آصف کے دو چوکوں کی بدولت اسلام آباد کا اسکور 150 ہوگیا۔

سولہواں اوور : 

کھیل کے اس اوور میں 8 رنز کا اضافہ ہوا، اسلام آباد کا اسکور دو کھلاڑیوں کے آؤٹ ہونے پر 134 رنز ہوگیا۔ ڈومنی 38 اور آصف علی 19 رنز کے ساتھ کریز پر موجود ہیں۔

پندرہواں اوور: 

اس اوور کے اختتام پر ٹیم اسلام آباد کا اسکور دووکٹوں کے نقصان پر 126 رنز ہے جس میں آصف علی کا ایک چوکا بھی شامل ہے۔

چودہواں اوور : 

اس اوور میں کراچی کنگز کو ایک اور کامیابی مل گئی، محمد عامر نے حسین طلعت کو کلین بولڈ کردیا، انہوں نے 8 رنز بنائے ، 7رنز کے اضافے کے ساتھ اسلام آباد کا اسکوردو وکٹوں پر 118 رنز ہوگیا۔

تیرہواں اوور : 

کھیل کے تیرہویں اوور میں صرف دو رن کا اضافہ ہوسکا، ٹیم اسلام آباد کا اسکور 111 رنز ہوگیا اور اس اکا ایک کھلاڑی آؤٹ ہوا ہے۔

بارہواں اوور : 

اس اوور میں صرف پانچ رنز کا اضافہ ہوسکا، اور ٹیم کا اسکور ایک وکٹ کے نقصان پر 109 ہوگیا۔ڈومنی 34 رنز کے ساتھ کریز پر موجود ہیں۔

گیارہواں اوور : 

کھیل کے اس اوور کی پانچویں بال پر لک رونچی محمد عرفا ن کی بال پر ان ہی کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوگئے، رونچی نے37 بال پر 71 رنز کی شاندار اننگز کھیلی۔ ٹیم اسلام آبا دکا مجموعی اسکور 104 رنز ایک کھلاڑی آؤٹ ہے۔

دسواں اوور : 

اس اوور میں بھی لک رونچی نے جارحانہ انداز جاری رکھا اور ایک چوکا لگا کر اپنی ٹیم کا اسکور 98 تک پہنچا دیا،

نواں اوور : 

اننگز  کے نویں اوور میں اوپنرز کے دو چوکوں کے ساتھ ٹیم اسلام آباد کا اسکور 90رنز ہوگیا، اور اس کا کوئی کھلاڑی آؤٹ نہیں ہوا۔

آٹھواں اوور : 

اسلام آباد یونائیٹڈ کے اوپنرز نے کھیل کا بہترین انداز میں آغاز کرتے ہوئے 8 اورر میں 80 رنز بنا لیے،

ساتواں اوور : 

اس اوور میں لک رونچی نے کراچی کنگز کے بالرتیمل ملز کی دھنائی کردی، انہوں نے چوکوں کی ہیٹ ٹرک کرتے ہوئے 24 بال پر 53 رنز بنا کر اپنی بہت شاندار نصف سینچری مکمل کی، جس میں انے سات چوکے شامل ہیں، ٹیم اسلام آبا د کا اسکور بغیر کسی نقصان کے 75 رنز بنا لیے۔

چھٹا اوور : 

چھ اوور کے اختتام پر ٹیم اسلام آباد نے میچ پر اپنی گرفت کافی حد تک مظبوط کرلی، رونچی کے شاندار 40 رنز کے ساتھ ٹیم کا مجموعی اسکور 61 رنز ہوگیا۔

پانچواں اوور : 

یہ اوور کراچی کنگز کیلئے بہت مہنگا ثابت ہوا، لک رونچی نے عثمان شنواری کی بال پر دو چھکے اور ایک چوکا لگا کر ٹیم کا اسکور 49 رنز کردیا، اسلام آباد کی کوئی وکٹ اب تک نہیں گرسکی ہے۔

چوتھا اوور : 

محمد عامر کے اس اوور میں 14رنز کا اجافہ ہوا جس میں لک رونچی کا ایک چھکا اور ایک چوکا بھی شامل ہے ٹیم اسلام آباد کا اسکور 32 رنز ہوگیا۔

تیسرا اوور : 

اسلام آبا یونائیٹڈ نے تین اوورز کے اختتام پربغیر کسی نقصان کے 18 رنز بنا لیے ، اس وقت کریز پر جے پی ڈومنی دس رنز اور لک رونچی سات رنز کےساتھ موجود ہیں۔

دوسرا اوور : 

کھیل کے دوسرے اوور میں محمد عامر کی بال پر جے پی ڈومنی نے دو شاندار چوکے لگائے اور12 رنز کے اضافے سے اپنی ٹیم کا اسکور بغیر کسی نقصان کے 13 رنز کردیا۔

پہلا اوور : 

اسلام آباد یونائیٹڈ کی جانب سے اپنرز جے پی ڈومنی اور لک رونچی نے کھیل کا آغاز کیا، عماد وسیم کا پہلے ا وور میں بغیر کسی نقصان کے صرف ایک رن بن سکا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

کراچی کنگز کی اننگز

بیسواں اوور : 

کھیل کے آخری اوور میں کراچی کنگز کے محمد رضوان نے محمد سمیع کی بال پر شاندار چوکا اور چھکا لگا دیا، اوور کے اختتام پر کراچی کنگز نے چھ وکٹوں کے نقصان پر 153 رنز بنالئے۔

انیسواں اوور : 

یہ اوور بھی کراچی کنگز کیلئے مشکل پیدا کرگیا ٹیم کے کپتان عماد وسیم دس رنز بنا کر فہیم اشرف کی بال پر آؤٹ ہوگئے ،مجموعی اسکور چھ وکٹ کے نقصان پر 138 رنزہے۔

اٹھارہواں اوور : 

اس اوور کی پانچویں بال پر روی بوپارہ رن بنانے کی کوشش میں آؤٹ ہوگئے، انہوں نے آٹھ رنز اسکور کیے، اس اوور کے اختتام پر کراچی کنگز کا اسکور 127رنز 5 کھلاڑی آؤٹ ہے۔

سترہواں اوور : 

یہ اوور بھی کراچی کنگز کیلئے مہنگا ثابت ہوا، 55 رنز بنانے والے بابر اعظم حسین طلعت کی بال پر کیچ آؤٹ ہوگئے ، کراچی کنگز کا مجموعی اسکور 118 رنز چار کھلاڑی آؤٹ ہے۔

سولہواں اوور : 

اوور کی دوسری بال پر خرم منظور 51رنز بنا کر فہیم اشرف کی بال پر صاحبزادہ فرحان کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوگئے،  جبکہ آخری بال پر کولن انگرام  ایک رن بنا کر کیچ آؤٹ ہوگئے۔ ٹیم کا اسکو ر اوور کے اختتام پر 110 رنز تین کھلاڑی آؤٹ ہے۔

پندرہواں اوور : 

کھیل کے پندرہویں اوور میں بابر اعظم نے زوردار چھکا لگایا اس کے بعد خرم منظور بھی پیچھے نہ رہے اور انہوں  نے بھی آخری بال پر ایک چوکا مار دیا، ٹیم کا اسکور 106رنز ایک کھلاڑی آؤٹ ہے، اس اوور کی خاص بات یہ ہے کہ خرم منظور اور بابر اعظم نے اپنی اپنی نصف سینچریاں بھی اسکور کرلی ہیں۔

چودہواں اوور : 

دس رنز کے اضافے ساتھ ٹیم کراچی کا اسکورایک وکٹ کے نقصان پر 91 رنز ہوگیا، جس میں خرم منظور کا ایک چھکا بھی شامل ہے۔ خرم منظور44 اور بابر اعظم 42 رنز کے ساتھ کریز پر موجود ہیں۔

تیرہواں اوور : 

اس اوور کی تیسری بال پر بابر اعظم نے ایک بار پھر زوردار شاٹ لگا کر گیند چوکے کےلیے پویلین پار لگادی جس کے بعد اسکور 81 رنز ہوگیا۔

بارہواں اوور : 

اس اوور کی پانچویں اور چھٹی بال پرخرم منظور نے دو لگاتار چولے لگائے، کراچی کنگز کا اسکور 71رنز ہے اور اس کا ایک کھلاڑی آؤٹ ہوا ہے۔

گیارہواں اوور : 

کھیل کے گیارہویں اوور کی پانچویں بال پر بابر اعظم نے شاداب خان کی گیند پر ایک خوبصورت چھکا لگا دیا، جس کے بعد ٹیم کا مجموعی اسکور 60 رنز ہوگیا۔

دسواں اوور : 

کراچی کنگز کی ٹیم سست روی سے کھیلتے ہوئے دس اوور میں 49 رنز بنا سکی ہے،آخری پانچ اوورز میں صرف 18 رنز کا اضافہ ہوا۔

ٹیم کے اوپنر جوزف ڈینلے صرف چار رنز بنا کر آؤٹ ہوگئے تھے۔ خرم منظور 23 اور بابر اعظم 22 رنز کے ساتھ کریز پر موجود ہیں۔

نواں اوور : 

اس اوور میں صرف تین رنز کا اضافہ ہوسکا، ٹیم کراچی کا اسکور 9 اوورز میں 44رنز ہے اور اسکی ایک وکٹ گر چکی ہے۔

آٹھواں اوور : 

اس اوور کی دوسری بال پر بابر اعظم نے زوردار شاٹ لگا کر گیند چار رنز کیلئے باؤنڈری کے باہر پھینک دی، اوور کے اختتام پر کراچی کنگز کا 41رنز کے ساتھ کھیل جاری ہے اور اس کا ایک کھلاڑی پویلین لوٹ چکا ہے۔

ساتواں اوور : 

ساتویں اوور کے اختتام پر ٹیم کراچی کا مجموعی اسکور 34 رنز ایک کھلاڑی آؤٹ ہے۔

چھٹا اوور : 

یہ اوور ٹیم کراچی کیلئے مشکل ثابت ہوا اس اوور میں صرف ایک رن کا اضافہ ہوسکا، ٹیم کا اسکور 32 رنز ہے۔

پانچوں اوور : 

اس اوور میں چھ رنز کا اضافہ ہوا، مجموعی اسکورایک وکٹ کے نقصان پر 31 رنز ہے ، خرم منظور 17 اور بابر اعظم 10 رنز کے ساتھ کریز پر موجود ہیں۔

چوتھا اوور : 

کھیل کے چوتھے اوور میں ٹیم کراچی نے نو رنز کے اضافے سے اسکور ایک وکٹ کے نقصان پر25رنز کردیا۔جس میں دو چوکے بھی شامل ہیں۔

تیسرا اوور : 

کراچی کنگز کا اسکور کھیل کے تیسرے اوور میں چھ رنز کے اضافے سے 16 رنز ہے کراچی کنگز کی ایک وکٹ گر چکی ہے۔

دوسرا اوور : 

کھیل کے دوسرے اوور کی چوتھی بال پر جوزف ڈینلے محمد سمیع کی بال پر کلین بولڈ ہوگئے، اوور کے اختتام پر کراچی کنگز کا اسکور10رن ہے اور اس کا ایک کھلاڑی آؤٹ ہوچکا ہے۔ نئے آنے والے کھلاڑی بابر اعظم ہیں۔

پہلا اوور: 

کراچی کنگز کی جانب سے اوپنرز جوزف ڈینلے اور خرم منظور نے کھیل کا آغاز کیا، پہلے اوور میں جوزف ڈینلے نے چوکا لگا کر اسکور پانچ رنز کردیا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

 کراچی کنگز کے اب تک کھیلے جانے والے میچز

واضح رہے کہ کراچی کنگز نے پی ایس ایل کے تیسرے ایڈیشن میں اب تک چار میچز کھیلے جن میں سے ملتان سلطانز کے خلاف ہونے والا مقابلہ بارش کی نذر ہوا جبکہ بقیہ تینوں میں ٹیم نے شاندار کارکردگی دکھا کر فتح اپنے نام کی۔

کراچی کنگز کا پہلا میچ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز سے ہوا تھا، اس ٹاکرے میں شاہد آفریدی نے سرفراز الیون کے سب سے زیادہ اسکور کرنے والے بلے باز عمر امین کا باؤنڈری پر ناقابل یقین کیچ پکڑا  اور یہی میچ کا ٹرننگ پوائنٹ ثابت ہوا، میچ میں کراچی کنگز نے 19 رنز سے فتح حاصل کی۔

پی ایس ایل کی سب سے بڑی ٹیم کراچی کنگز کا دوسرا مقابلہ دفاعی چیمپئن پشاور زلمی سے ہوا تھا جس میں کنگز کے شیروں نے سیمی الیون کو سنسنی خیز مقابلے کے بعد 5 وکٹوں سے شکست دی تھی۔

کراچی کنگز اور لاہور قلندرز کے مابین تیسرا میچ گزشتہ روز دبئی اسٹیڈیم میں کھیلا گیا، جس میں روی بوپارا کی شاندار ففٹی اور آفریدی کی تین وکٹوں لے کر ٹیم کو ناقابلِ یقین فتح دلوائی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں