The news is by your side.

Advertisement

عدالتی حکم کے بعد پی ایس او کے بھی درجنوں ملازمین برطرف

کراچی ۔ سپریم کورٹ کی جانب سے برطرف ملازمین کی بحالی کے ایکٹ دوہزار دس کو کالعدم قرار دینے کے حکم پر عملدرآمد شروع کردیا گیا۔

اعلیٰ عدالتی فیصلے کے تحت وفاقی ادارے پی ایس او سے ملازمین کی برطرفی کا حکم جاری کردیا گیا ہے۔ گزشتہ ہفتے محکمہ سوئی گیس سے سینکڑوں ملازمین کو برطرف کیا گیا تھا۔

اس حوالے سے ذرائع کا کہنا ہے کہ پی ایس او نے ملازمین کو برطرفی کے لیٹر جاری کردیئے ہیں، پی ایس او کے ایچ آر ڈیپارٹمنٹ نے متعلقہ ملازمین اور افسران کے کو مراسلہ ارسال کر دیا۔

مراسلہ میں کہا گیا ہے کہ سپریم کورٹ آف پاکستان کے فیصلے میں مذکورہ ایکٹ کو آئین کی خلاف ورزی قرار دے کر کالعدم قرار دیا گیا ہے، مذکورہ ایکٹ کے مطابق برطرفی کے بعد ملازمت پر بحال ان ملازمین کو فوری طور پر کام سے روک دیا گیا ہے۔

مراسلے میں ملازمین کو ڈیوٹی کے لئے آنے سے روک دیا گیا ہے، اکاونٹس کی تفصیلات ملازمین کو ارسال کردی جائیں۔ فیصلے کے مطابق بحالی کے وقت ملنے والی یکمشت رقم بھی واپس لی جائے۔

یاد رہے کہ سپریم کورٹ نے17 اگست کو پیپلزپارٹی پارٹی کے دور میں جاری ہونے والے سیکڈ ایمپلائز دی انسٹیٹ ایکٹ دوہزار دس کو کالعدم قرار دیا تھا۔ اسی ایکٹ کے تحت نوے کی دہائی میں نواز شریف حکومت میں بے دخل کیے گیے ملازمین کو بحال کیا گیا تھا۔

پی ایس او نے ملک کی عدالت عالیہ کے حالیہ فیصلے کی تعمیل میں2010 کے ایکٹ کے تحت بحال ہونے والے 63 ملازمین کو ملازمت سے سبکدوش کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں