The news is by your side.

Advertisement

پاکستان تحریک انصاف اندرونی انتشار کا شکار ہوگئی

پشاور : پاکستان تحریک انصاف اندرونی انتشار کا شکار ہوگئی، حکومتی اراکین کے اختلاف کھل کر سامنے آنے لگے، پشاور اسمبلی اجلاس کے دروان اراکین نے اپنے ہی بجٹ کی کاپیاں پھاڑ کر ایوان میں اچھال دیں۔

تفصیلات کے مطابق پشاور اسمبلی میں بحٹ پر بحث کی اجازت نہ ملنے پر چار حکومتی ارکان نے شدید احتجاج کیا اور بجٹ کی کاپیاں پھاڑ ڈالیں، چاروں اراکین نے اسمبلی اجلاس سے واک اؤٹ کیا تو اپوزیشن نے موقع کا فائدہ اٹھاتے ہوئے اجلاس کا بائیکاٹ کردیا۔

واک آوٹ کرنے والوں میں قربان خان،یاسین خلیل،بابر سلیم اور جمشید خان شامل تھے۔

دوسری جانب وزیر اعلی خیبر پختونخوا پرویزخٹک کے مشیر شکیل احمد نے بھی مستعفی ہونے کی دھمکی دیتے ہوئے کہا کہ ’’ تبدیلی اوراصلاحات کےنام پرووٹ لیا لیکن ہوتاکچھ نظرنہیں آرہا‘‘۔

مزید پڑھیں : عمران خان صوبائی اسمبلی کے ناراض اراکین کو منانے میں‌ کامیاب ہوگئے

 یاد رہے کہ گزشتہ روز صوبائی وزیر صحت شہرام ترکئی نے اپنے ہی پارٹی کے ایم این اے داوڑ خان کنڈی کو ایک ارب روپے ہرجانے کا نوٹس بھجوایا دیا ہے، جس میں اُنہوں نے موقف اختیار کیا ہے کہ اُن پر بے بنیاد الزامات عائد کئے گئے ہیں۔

قبل ازیں کے پی کے میں وزیر اعلیٰ کو اپنے ہی اراکین کی مخالفت کا سامنا ہے، جس پر تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کئی اہم مٹینگز بھی کرچکے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں