The news is by your side.

Advertisement

آرٹیکل 370 کا خاتمہ: تحریک انصاف کا جمعے کو بڑے عوامی احتجاج کا فیصلہ

اسلام آباد: بھارت کی جانب سے آرٹیکل 370 کے خاتمے اور کشمیر پر مستقل قبضہ جمانے کی شرمناک کوشش پر پاکستان تحریک انصاف نے بھرپور مزاحمت کا اعلان کرتے ہوئے بڑے عوامی احتجاج کا فیصلہ کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق مودی سرکار کی جانب سے کشمیر پر مستقل قبضہ جمانے کی شرمناک کوشش پر پاکستان تحریک انصاف نے بھارت کے غاصبانہ اقدام کی ہر سطح پر بھرپور مزاحمت کا اعلان کردیا۔ تحریک انصاف نے جمعے کو اسلام آباد میں بڑے عوامی احتجاج کافیصلہ کیا ہے۔

پارٹی چیف آرگنائزر سیف اللہ خان نیازی کی زیر صدارت پارٹی کا اہم اجلاس ہوا۔ سیف اللہ خان کا کہنا تھا کہ جمعے کو ڈی چوک میں جمع ہوں گے اور اقوام متحدہ کے دفتر کی جانب مارچ کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ آرٹیکل 370 پر وار کر کے بھارت قبضے کا نام نہاد جواز بھی کھو بیٹھا ہے، بھارت کے غاصبانہ قبضے کا واحد جواز سنہ 1952 کا دہلی معاہدہ تھا، سیکولر ازم کا نقاب چڑھانے کا حقیقی فاشسٹ چہرہ دنیا کے سامنے بے نقاب ہوا۔

سیف اللہ خان کا کہنا تھا کہ بھارت نے کشمیر پر بزور طاقت قبضہ جمانے کی کوشش کی، پاکستان کے پاس اہل کشمیر کی جدوجہد کی معاونت کے تمام راستے کھلے ہیں۔ بھارت قبضے کے اسرائیلی منصوبے کو عملی جامہ پہنانا چاہتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ بھارت کو شرمناک ایجنڈے کی تکمیل کی اجازت نہیں دیں گے۔ کارکن تیاری کریں، جمعے کو لائحہ عمل کا اعلان کریں گے۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز بھارتی وزیر داخلہ امیت شاہ نے آرٹیکل 370 ختم کرنے کا بل بھارتی پارلیمنٹ میں پیش کیا تھا۔ بل کی تجاویز کے تحت غیر مقامی افراد مقبوضہ کشمیر میں سرکاری نوکریاں حاصل کرسکیں گے اور 370 ختم ہونے سے مقبوضہ کشمیرکی خصوصی حیثیت بھی ختم ہوجائے گی۔

بعد ازاں بھارتی صدر نے آرٹیکل 370 ختم کرنے کے بل پر دستخط کر دیے اور گورنر کا عہدہ ختم کر کے اختیارات کونسل آف منسٹرز کو دے دیے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں