site
stats
خیبر پختونخواہ

حکومت الیکٹرانک ووٹنگ کے نفاذ میں تاخیر کررہی ہے، پی ٹی آئی

اسلام آباد : تحریک انصاف کا کہنا ہے کہ شفاف انتخابات کے لیے الیکشن کمیشن کو حکومتی اثرات سے مکمل پاک کرنا ہوگا جس کے اصلاحات لا رہے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق تحریک انصاف کے مرکزی رہنما جہانگیر ترین کی زیر صدارت پارٹی کے اہم اجلاس میں انتخابی اصلاحات کے ایجنڈے پر غور کیا گیا اور اس حوالے سے اہم تجاویز مرتب کی گئیں، اس اہم اجلاس میں اسد عمر، شیریں مزاری، عارف علوی، شفقت محمود، فواد چوہدری ،اعظم سواتی، شبلی فراز، غلام سرورخان اورعلیم خان نے شرکت کی۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ انتخابی اصلاحات کےمختلف پہلووٴں پرتحقیق کے لیے 3رکنی کمیٹی قائم کر دی گئی جس میں عارف علوی، غلام سرورخان اور شفقت محمود شامل ہوں گے۔

اجلاس کے شرکاء نے الیکٹرانک ووٹنگ کےنفاذ میں حکومت کی جانب سے تاخیری حربوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ الیکٹرانک ووٹنگ ممکن ہے لیکن حکومت سنجیدہ نہیں۔

اجلاس کے شرکاء نے مطالبہ کیا کہ الیکشن کمیشن کوحکومتی اثرسےمکمل طور سے پاک کر کے الیکشن کمیشن کومکمل قانونی، مالیاتی اور انتظامی اختیارات دینا ہوں گے جب کہ بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو بھی ووٹ کا حق دیا جائے۔

بعد ازاں تحریک انصاف کے مرکزی رہنما جہانگیر ترین نےکہا کہ پی ٹی آئی نےانتخابی نظام کی شفافیت کے لیے تاریخی جدوجہد کی ہے چنانچہ انتخابی نظام کےذریعے پاناما کےثمرات کو ضائع نہیں ہونےدیں گے جس کے لیے ناقص انتخابی نظام کےبل بوتے پر مینڈیٹ چرانےکی روایت ختم کرنا ہوگی۔

انہوں نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ تحریک انصاف نوازحکومت کی عدم دلچسپی کے باوجود انتخابی نظام کی اصلاح کریں گے اور آئندہ انتخابات میں حکومت کو بال ٹیمپرنگ اور امپائرز کو ساتھ ملا کر دھاندلی نہیں کرنےدیں گے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top