The news is by your side.

Advertisement

فارن فنڈنگ کیس سے پی ٹی آئی کو کوئی خطرہ نہیں، فیصل چوہدری

اسلام آباد : تحریک انصاف کے سابق وکیل فیصل حسین چوہدری کا کہنا ہے کہ معاملہ فارن فنڈنگ کا نہیں بلکہ ممنوعہ فنڈنگ کا ہے، پی ٹی آئی کوکوئی خطرہ نہیں ، تحریک انصاف کے ساتھ مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی کی ممنوعہ فنڈنگ کے کیس کو بھی دیکھا جائے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے فارن فنڈنگ کیس کے معاملے پر پی ٹی آئی کے سابق وکیل فیصل حسین چوہدری نے اہم بیان دیتے ہوئے کہا ہے کہ فارن فنڈنگ کیس سے پی ٹی آئی کوکوئی خطرہ نہیں، معاملہ فارن فنڈنگ نہیں بلکہ ممنوعہ فنڈنگ کا ہے۔

فیصل حسین چوہدری کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ 2018کےحنیف عباسی کیس میں واضح کر چکی ہے ، ممنوعہ فنڈنگ معاملے کو وفاقی حکومت دیکھنےکااختیار رکھتی ہے، میڈیا میں کچھ دوست پرانےقانون کا حوالہ دے رہے ہیں، اپوزیشن رہنمابھی پرانے قانون کا حوالہ دے رہے ہیں جوختم ہوچکا۔

پی ٹی آئی کے سابق وکیل نے کہا سیاسی جماعتیں جمہوری نظام کاپلرہوتی ہیں، ختم کرنااتناآسان نہیں، پی ٹی آئی فنڈنگ کیس میں جو تاثر بنایا جا رہا ہےوہ درست نہیں، الیکشن کمیشن سمیت اداروں کو بھی دیکھنا ہے انصاف ہوتا نظر آئے اور ن لیگ،پی پی کی ممنوعہ فنڈنگ کیس کوبھی دیکھا جائے۔

یاد رہے گذشتہ روز پی ٹی آئی فنڈنگ کیس میں اپوزیشن کی رہبرکمیٹی کی درخواست منظور ہوگئی تھی اور الیکشن کمیشن نے چھبیس نومبر سے روزانہ کی بنیاد پر سماعت کرنے کا فیصلہ کیا تھا ، الیکشن کمیشن نے اسکروٹنی کمیٹی کو کام تیزکرنےکی ہدایت کرتے ہوئے کہا تھا کہ پی ٹی آئی فنڈنگ کیس کی سماعت اب روزانہ ہوگی۔ چیف الیکشن کمشنر کی عدم موجودگی میں دو اراکین نے یہ فیصلہ لکھا۔

دوسری جانب فارن فنڈنگ کیس میں مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی بھی الیکشن کمیشن کے ریڈار پرآگئیں ہیں ، اسکرونٹی کمیٹی نے دونوں جماعتوں کوچھبیس نومبر کے لئے سمن جاری کردیا ہے ، دونوں جماعتوں کوایک ہی دن الگ الگ وقت میں طلب کیا گیا ہے، ن لیگ اور پیپلزپارٹی پر امریکا اور برطانیہ سے غیر قانونی فنڈنگ حاصل کرنے کا الزام عائد ہے، پی ٹی آئی کے رہنما فرخ حبیب نے دونوں جماعتوں کے خلاف درخواست دائر کررکھی ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں