The news is by your side.

Advertisement

فنڈز خوردبرد کیس، چیف الیکشن کمشنر نے پی ٹی آئی کو 17 مئی کی آخری مہلت دے دی

اسلام آباد: الیکشن کمیشن نے پی ٹی آئی پارٹی فنڈز خوردبرد کیس کو قابل سماعت قرار دیتے ہوئے پی ٹی آئی کو 17 مئی تک آخری مہلت دیدی۔

تفصیلات کے مطابق چیف الیکشن کمشنر سردار رضا کی سر براہی میں پی ٹی آئی فنڈنگ سےمتعلق کیس کی سماعت ہوئی، الیکشن کمیشن نے پی ٹی آئی کا موقف مسترد کرتے ہوئے کیس کو قابل سماعت قرار دے دیا۔

چیف الیکشن کمشنر کا کہنا ہے کہ سماعت الیکشن کمیشن کے دائر کار میں ہے جو تفصیلات طلب کی ہیں فراہم کی جائیں ۔ پی ٹی آئی کے وکیل نے تفصیلات جمع کرانے کی یقین دہانی کرائی۔

توہین عدالت کے معاملہ پر آخری مہلت دیتے ہوئے الیکشن کمیشن نے 17 مئی تک حتمی جواب جمع کرانے کی ہدایت کرتے ہوئے قرار دیا کہ توہین عدالت کا معاملہ الگ سے سنا جائے گا۔


مزید پڑھیں : حمزہ شہباز، عمران خان ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کیس کا فیصلہ محفوظ


دوسری جانب الیکشن کمیشن نے عمران خان اور حمزہ شہباز ضابطہ اخلاق خلاف ورزی کیس کی بھی سماعت کی ۔ الیکشن کمیشن نے عمران خان کے وکیل سے سپریم کورٹ اور اسلام اباد ہائیکورٹ کے فیصلوں کی نقول طلب کر لیں جبکہ حمزہ شہباز کیس میں پہلے ہی غیر مشروط معافی مانگ چکے ہیں۔

بعد ازاں  دونوں کیس کی سماعت 17 مئی تک ملتوی کردی گئی۔

الیکشن کمیشن کے فیصلے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اکبرایس بابرکا کہنا تھا کہ آج کا فیصلہ پاکستان کی سیاست کیلئے ایک مثبت پہلوہے، الیکشن کمیشن نے کہا سیاسی پارٹیاں قانون کےتابع ہیں، پی ٹی آئی نے بیرونی فنڈنگ سے متعلق ثبوت پیش نہیں کئے، عدالت نےعمران خان کو اکاؤنٹس کی تفصیلات جمع کرانے کا کہا ہے، تحریک انصاف نے ابھی تک انٹراپارٹی الیکشن نہیں کرائے۔

اکبر ایس بابر نے کہا کہ  تحریک انصاف آج دوبارہ امتحان میں ہے، خیبرپختونخوامیں احتساب کی دھجیاں اڑادی گئیں، عمران خان اصلاح چاہتے ہیں تو خود کو احتساب کیلئے پیش کریں، عمران خان کو چاہیے الیکشن کمیشن کے فیصلے پرعمل کریں، تحریک انصاف کے کارکن عمران خان سے فیصلے پرعملدرآمد کرائیں۔

انکا مزید کہنا تھا کہ ہمارا مقصد تحریک انصاف کو بچانا اور بنیادی اصولوں پر لانا ہے، تحریک انصاف کی قیادت کے قول وفعل میں تضاد آگیا ہے،  کیس کی تفصیل آنےپرجھوٹوں کا منہ کالا ہوجائے گا، خود احتساب سے بھاگنے والا دوسروں کے احتساب کا مطالبہ نہیں کرسکتا۔

واضح رہے کہ 4 ماہ قبل تحریکِ انصاف کے بانی رکن خواجہ اکبر ایس بابر نے الیکشن کمیشن میں دائر درخواست میں عمران خان پر الزام لگایا تھا کہ وہ پارٹی فنڈز میں خورد برد کے مرتکب ہورہے ہیں جبکہ تحریکِ انصاف کو بیرونی فنڈنگ بھی ہوتی ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں