The news is by your side.

Advertisement

کوئی طاقت 2 نومبر اسلام آباد کے احتجاج کو نہیں روک سکتی، عمران‌ خان

پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے کہا کہ کوئی طاقت 2 نومبر اسلام آباد کے احتجاج کو نہں روک سکتی، 2نومبر کو تاریخی اور فیصلہ کن اجتماع ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ کا بنی گالہ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میں تمام پاکستانیوں کو 2 تاریخ کے احتجاج میں شرکت کی دعوت دیتا ہوں، سب بھرپور طریقے سے شرکت کریں، میرا جذبہ اور جنون روز بروز بڑھتا جا رہا ہے ، ایک اندھیری رات کے بعد روشنی نظر آرہی ہے۔

نواز شریف کو کبھی جمہوریت کی سمجھ ہی نہیں آئی

عمران خان نے نواز شریف کی بادشاہت کی مزمت کرتے ہوئے کہا کہ نواز شریف ایک آمر کے سائے تلے پلے بڑھے ہیں، نواز شریف کو کبھی جمہوریت کی سمجھ ہی نہیں آئی، یہ جب بھی اقتدار میں آیا، امیر المومنین بننے کی کوشش کی اور اداروں کو تباہ کیا۔

انھوں نے کہا کہ نواز شریف نے جتنا نقصان پاکستان کو پہنچایا ، کسی پاکستانی نے نہیں پہنچایا، نواز شریف نے لوگوں کے ضمیر کا سودا کیا، نوازشریف نہ استعفی دیتے ہیں اور نہ احتساب دیتے ہیں، وزیر اعظم نے آئین توڑا ہے۔

دو نومبر کو اسلام آباد میں تاریخی اور فیصلہ کن اجتماع ہوگا

کپتان نے کہا کہ 2نومبر کو اسلام آباد میں تاریخی اور فیصلہ کن اجتماع ہوگا، پُر امن احتجاج ہمارا حق ہے روکنے کی کوشش نہ کی جائے، پاکستان کی تاریخ میں اتنے لوگ کبھی نہیں نکلے ہونگے جو 2 نومبر کو نکلیں گے، رہنماؤں کے گھروں اور ٹرانسپوٹر کو روکنے کی کوشش کی جارہی ہے ، جس طرح کے حربے استعمال کئے جا رہے ہیں یہ لوگ ناکام ہونگے۔

انکا کہنا تھا کہ کوئی طاقت 2 نومبر کے احتجاج کو نہں روک سکتی، ہم رکنے والے نہیں اسی طرح کیا گیا تو ملک انتشار کی طرف جائے گا، لوگ کل راولپنڈی میں ایک ٹریلر دیکھ لیں گے۔

پنجاب پولیس کے ہاتھوں پر ماڈل ٹاؤن کے لوگوں کا خون ہے

عمران خان کا پنجاب پولیس سے متعلق کہنا تھا کہ پنجاب پولیس کے ہاتھوں پر ماڈل ٹاؤن کے لوگوں کا خون ہے، نواز شریف اور شہباز شریف اس کے ذمہ دار تھے، خیبر پختوانخوا کی پولیس غیر سیاسی ہے جبکہ پنجاب پولیس کو جانبدار بنادیا گیا ہے۔

اسلام اباد کورٹ کے حکم سے متفق نہیں، وکیل ںعیم بخاری

پاکستان تحریک انصاف کے وکیل ںعیم بخاری کا کہنا تھا کہ اسلام اباد کورٹ کے حکم سے متفق نہیں، فیصلے کی بنیاد تعصب ہے ، عدالت نے آرڈر سنے بغیر جاری کیا ،ہم اس آرڈر کو چیلنج کریں گے، یہ احکامات دائرہ اختیار سے باہر نکل کر جاری کیے گئے۔

اسلام آباد ہائی کورٹ کا حکم چیلنج کریں گے، بابر اعوان

وکیل پی ٹی آئی بابر اعوان اسلام آباد ہائیکورٹ کے آرڈر کو دیکھ لیا، جائزہ لے رہے ہیں، دو طرح کی پٹیشن فائل کرنے پر غور کررہے ہیں، ’سپریم کورٹ کا فیصلہ تمام عدالتوں پر اتھارٹی کی حیثیت رکھتا ہے، آئین کے آرٹیکل 10کے تحت کسی فریق کو سنے بغیر کوئی فیصلہ یا حکم نہیں دیا جاسکتا۔

بابر اعوان نے کہا کہ ’آئندہ 24 گھنٹوں میں اسلام آباد ہائی کورٹ کا حکم چیلنج کردیں گے۔

اس سے قبل اسلام آباد بند نہ کرنے کے عدالتی حکم کے بعد تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کی قیادت میں رہنماؤں نے آئینی ماہرین کے ساتھ بنی گالہ سرجوڑلی، پی ٹی آئی کے رہنما نے کہا کہ احتجاج ہمار آئینی حق ہے۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کارکن جمع خاطر رکھیں اجتماع تو ہرصورت ہوگا، نعیم الحق نے کہا پنجاب پولیس کارکنوں کو ہراساں کررہی ہے جبکہ ترجمان پی ٹی آئی نے کہا کہ حکومت باز آجائے ورنہ دمادم مست قلندر ہوگا۔


مزید ہڑھیں:  ہائی کورٹ نے تحریک انصاف اور انتظامیہ کو شہر سیل کرنے سے روک دیا


واضح رہے کہ اسلام آباد ہائی کورٹ میں تحریک انصاف کے 2 نومبر کے دھرنے کو روکنے سے متعلق درخواست کی سماعت میں عدالت نے تحریک انصاف اور ضلعی انتظامیہ کو شہر سیل کرنے سے روکتے ہوئے دھرنے کے لیے پریڈ گراؤنڈ کو مختص کرنے کی ہدایت کی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں