The news is by your side.

Advertisement

وزیرِ اعلیٰ سندھ کو نہیں ہٹایا گیا تو ہم شور کریں گے: علی زیدی

کراچی: وفاقی وزیر برائے بحری امور علی زیدی نے کہا ہے کہ وزیرِ اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کو نہیں ہٹایا گیا تو ہم شور کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق علی زیدی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وزیرِ اعلیٰ پر کرپشن کے الزامات ہیں، ان کو نہیں ہٹایا گیا تو شور کیا جائے گا، سندھ میں پیپلز پارٹی کی حکومت ہے، وہ وزیرِ اعلیٰ تبدیل کرنا چاہتے ہیں تو کر لیں۔

پیپلز پارٹی کے لوگ ہم سے رابطے کر رہے ہیں، ایم پی ایز فون کر رہے ہیں کہ ہماری جان چھڑاؤ۔

وفاقی وزیر

علی زیدی نے کہا کہ پیپلز پارٹی پاناما جے آئی ٹی پر نواز شریف سے استعفے کا مطالبہ کر رہی تھی، جے آئی ٹی میں مراد علی شاہ کا نام آیا ہے تو وہ استعفیٰ کیوں نہیں دے رہے، پی پی قیادت جو مرضی کر لے عوام بے وقوف نہیں، سب دیکھ رہی ہے۔

انھوں نے کہا ’سندھ میں آپریشن ہوا تو لاڑکانہ میں سب بھاگتے پھر رہے ہیں، سمجھ آ گیا ہے کہ سندھ میں ان کو آپریشن پر تکلیف پکڑ دھکڑ کی وجہ سے تھی، اداروں نے کام کرنا شروع کر دیا ہے تو یہ دیواروں پر سر مارتے پھر رہے ہیں۔‘

وفاقی وزیر نے مزید کہا ’جے آئی ٹی نے سب کچھ سامنے رکھ دیا کہ آصف زرداری کتنا عقل مند ہے، پیپلز پارٹی کے لوگ ہم سے رابطے کر رہے ہیں، ایم پی ایز فون کر رہے ہیں کہ ہماری جان چھڑاؤ، سندھ کے سسٹم سے ڈرے ہوئے لوگ اب سامنے آنے لگے ہیں۔‘


یہ بھی پڑھیں:   جعلی اکاؤنٹس کیس: آصف زرداری سمیت 172 افراد کے بیرونِ ملک سفر پر پابندی


علی زیدی کا کہنا تھا تھا کہ پیپلز پارٹی نے پورے سندھ میں تباہی مچائی ہے، کراچی کے علاوہ اندرون سندھ کے شہروں کا برا حال ہے، اسکولوں، تھانوں، اسپتالوں کا حال دیکھ لیں، 10 سال دودھ کی جو نہریں بہائی ہیں وہ پوری دنیا نے دیکھ لیا ہے۔

انھوں نے کہا کہ عمران خان کسی سے مک مکا نہیں کریں گے، ہم نے ایک ٹائل بھی تبدیل کر دیا تو ہمارا وزیرِ اعظم ہمیں فارغ کر دے گا، سندھ میں ظلم اور کرپشن کا نظام نہیں چلنے دیں گے، پیپلز پارٹی نے احتجاج کرنا ہے تو رائے ونڈ جا کر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں