The news is by your side.

Advertisement

‘دیکھ کر تو یہی لگتا ہے کہ حکومت ہفتوں بھی نہیں چلے گی’

پی ٹی آئی رہنما اسد عمر نے کہا ہے کہ غیر یقینی صورتحال میں ملک اور معیشت نہیں سنبھالی جا سکتی،’دیکھ کر تو یہی لگتا ہے کہ حکومت ہفتوں بھی نہیں چلے گی۔

پی ٹی آئی رہنما اور وفاقی وزیر اسد عمر نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ملکی زرمبادلہ کے ذخائر میں ہم نے تنکا تنکا کرکے اضافہ کیا تھا، ہمارے دور میں برآمدات اور ترسیلات زر میں اضافہ ہوا لیکن عدم اعتماد کے آنے کے بعد 4 ہفتے میں زرمبادلہ کے ذخائر میں کمی آئی، جس تیزی سے زرمبادلہ کے ذخائر گررہے ہیں توروپیہ پر دباؤ تو آئےگا، معیشت کے فیصلے کیسے ہوسکتےہیں جب یہی نہ پتا ہو کہ حکومت کتنا عرصہ چلے گی۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان کی حکومت کو گئے ایک دن ہی ہوا تھا تو امریکا کا ڈومور کا مطالبہ آگیا، موجودہ حکومت پر ڈومورکا دباؤ آچکا ہے۔

اسد عمر نے کہا کہ دوتہائی اکثریت عوام کی سمجھتی ہے کہ الیکشن ہوجانا چاہیے، امپورٹڈ حکومت واقعی ملک کا درد رکھتی ہے تو الیکشن کرائے، ڈر کس بات کا ہے سیاسی میدان میں آکرعمران خان کا مقابلہ کریں

انہوں نے مزید کہا کہ قوم نے فیصلہ کرلیا ہے کہ اب حقیقی آزادی کیساتھ زندگی گزارنی ہے، عمران خان کے ساتھ عوام کھڑی ہے، عمران خان جب کال دیتےہیں توعوام نکلتی ہے، ہمیں اعتماد ہےعمران خان کی کال پر لوگ نکلیں گے، کراچی میں عمران خان کیلئے اتوار کے روز عوام خود نکلی تھی اور اب لاہور میں جلسے کیلئے جگہ کم پڑنےوالی ہے، لوگ جلسے میں پہنچنے کیلئے جلد از جلد نکلیں۔

اسد عمر نے کہا کہ کہا جارہا ہے کہ سی پیک سست روی کا شکارہوگیا اب تیزی سے کام ہوگا، ہمارے دور میں سی پیک کے تحت ہزاروں میگاواٹ بجلی کے کارخانے مکمل کیے گئے، سڑکیں مکمل کی گئیں، مغربی راہداری پرکام شروع ہوا، اگر گوادر کو چین سے نہ جوڑاجائے تو معاشی راہداری کیا ہوگی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں