site
stats
پاکستان

ملک کےخزانے پر پاکستان کا سب سے بڑا چور بیٹھا ہے، فوری گرفتارکیاجائے، بابر اعوان

اسلام آباد : پاکستان تحریک انصاف کے رہنما بابر اعوان نے کہا کہ ملک کےخزانے پر پاکستان کا سب سے بڑا چور بیٹھا ہے، فوری گرفتار کیاجائے، مریم نوازصاحبہ کابھی جھوٹ پکڑا گیا ہے، مریم نوازکے جھوٹ کے بعد پورے خاندان کیخلاف مقدمہ درج ہونا چاہیے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے رہنما بابر اعوان نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جے آئی ٹی کی پیش کی گئی رپورٹ پر کچھ آئینی اور قانونی نکات بتانا چاہتا ہوں، پی ٹی آئی مطالبہ کرتی ہے اسحاق ڈار کے خلاف فوری طور پر مقدمہ درج کیا جائے اور عہدے سے ہٹاکر گرفتار کیا جائے، خیرات کے نام پر کروڑوں روپے کا غبن کیا گیا، سپریم کورٹ سوموٹو لے۔

بابراعوان کا کہنا تھا کہ کل طے ہوگیا نوازشریف صاحب خود بھی آف شورکمپنی کے مالک ہیں، نوازشریف نے کبھی بھی آف شورکمپنی کا ذکر نہیں کیا، اسحاق ڈارنے طویل عرصے تک اپنے اثاثے ظاہر نہیں کیے۔

پی ٹی آئی رہنما نے ایاز صادق پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ اسپیکرایاز صادق نوازشریف کیخلاف ریفرنس نہ بھیجنے پر عہدے کو چھوڑ دیں، ایازصادق صاحب اسپیکربنیں شیرنہ بنیں۔

انھوں نے کہا کہ مریم نوازصاحبہ کابھی جھوٹ پکڑا گیا ہے، ان کے شوہر کا بیان اہم ہے، مریم نواز کے جھوٹ کے بعد پورے خاندان کیخلاف مقدمہ درج ہونا چاہیے، شریف خاندان کا نام فوری طور پر ای سی ایل میں شامل کیا جائے، کل منظرعام پر آنے والی تفصیلات صرف ایک مقدمے میں آئی ہیں، سستی روٹی، میٹرو بس، یلو کیپ اور شوگر ملز کے کیس کھلیں گےتو اور بھی حقائق آئیں گے۔

بابراعوان کا کہنا تھا کہ ن لیگ کو جے آئی ٹی کی رپورٹ کو چیلنج کرنے کی ضرورت نہیں پڑے گی، جےآئی ٹی رپورٹ کی جلد10 میں سے گاڈ فادر نکلے گا، سپریم کورٹ نئے دلائل سنے گی کل وضاحت کردی گئی ہے، نوازشریف کے وعدے نہیں یاد دلانا چاہتا کہ میں گھر چلاجاؤں گا۔

تحریک انصاف کے رہنما نے مزید کہا کہ شریف خاندان کی طرف جواب نہیں دھمکیاں اورالزامات آئے، اب مہینوں نہیں دنوں میں احتساب کا عمل ہوگا، اب خاندانی بادشاہت کے زوال کا وقت آگیا ہے، جھوٹ بولنے اور جعلی سازی پر کارروائی ہوسکتی ہے۔

انکا کہنا تھا کہ ثابت ہوگیا نوازشریف صادق اورامین نہیں ہیں، سپریم کورٹ سے مطالبہ ہے جعلی کاغذات دینے والے کو بھی گرفتار کیا جائے۔


اگرآپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اوراگرآپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پرشیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top