ذرا سی شرم اور حیا ہے تو وزیراعظم مستعفی ہوجائیں، فواد چوہدری -
The news is by your side.

Advertisement

ذرا سی شرم اور حیا ہے تو وزیراعظم مستعفی ہوجائیں، فواد چوہدری

اسلام آباد : پاکستان تحریک انصاف کے رہنما فواد چوہدری نے کہا کہ نوازشریف نے عدالت میں جھوٹ بولا، ذرا شرم اور حیا ہے تو وزیراعظم مستعفی ہوجائیں، پانچویں ججز نے نوازشریف کاجواب مسترد کیا۔

تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی کے رہنما فواد چوہدری نے پاناما کیس کا فیصلہ آنے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ  پانچوں ججز نے وزیراعظم کے دفاع کو مسترد کردیا ہے،  ملک کا وزیراعظم جوائنٹ ڈائریکٹر ایف آئی اے کے سامنے پیش ہوکر بتائے گا کہ کالا دھن کیسے جمع کیا، ذرا شرم اور حیاہےتووزیراعظم مستعفی ہوجائیں۔

وزیراعظم اور انکے بچے جھوٹ بولنے، ملک کا پیسہ چوری کرنے کے مرتکب ہوئے ہیں، عمران اسماعیل

پی ٹی آئی رہنما عمران اسماعیل نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ وزیراعظم اور انکے بچے جھوٹ بولنے، ملک کا پیسہ چوری کرنے کے مرتکب ہوئے ہیں،  جو ہمیں شرم دلاتے تھے آج کہاں ہیں۔ ہمیں شرم دلانےوالوں سے پوچھیں کون سی شرم کون سی حیا، چوری کے پیسوں سے لندن میں جائیداد بنائی گئی، اگر تھوڑی بھی شرم ہے تو مستعفی ہوجانا چاہیے۔

عمران اسماعیل نے کہا کہ صرف67دن کی ملے ہیں، اسکے بعد نکال دیے جائیں گے۔

جے آئی ٹی کرمنلز پر بنتی ہے، علی زیدی

پاکستان تحریک انصاف کے رہنما علی زیدی کا کہنا تھا کہ جے آئی ٹی کرمنلز پر بنتی ہے، وزیراعظم نواز شریف جے آئی ٹی کے بعد اخلاقی جواز کھوچکے ہیں، جےآئی ٹی عزیز بلوچ، صولت مرزا، ماڈل ٹاؤن، بلدیہ فیکٹری پر بنی تھی۔


مزید پڑھیں : پاناما کیس فیصلہ: رقم قطر کیسے گئی‘ جے آئی ٹی بنانے کا حکم


یاد رہے کہ سپریم کورٹ آف پاکستان نے پاناما کیس پر  فیصلہ سناتے ہوئے جوائنٹ انوسٹی گیشن کمیٹی بنانے کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ جے آئی ٹی ہر  15روز بعد رپورٹ پیش کرے،  وزیراعظم ،حسن اور حسین جےآئی ٹی میں پیش ہونگے اور جے آئی ٹی 60روز میں اپنی رپورٹ پیش کرے گی۔

سپریم کورٹ نے اپنے فیصلے میں کہا کہ وزیراعظم کی اہلیت کا فیصلہ جے آئی ٹی رپورٹ پرہوگا، جے آئی ٹی میں آئی ایس آئی، نیب کا نمائندہ، حکم سیکیورٹی ایکس چینج، ایف آئی اے کا نمائندہ بھی شامل ہوگا۔

سپریم کورٹ نے قطری خط کو مسترد کردیا اور حکم دیا کہ لندن فلیٹس کس کی ملکیت ، منی ٹریل کا پتہ چلایا جائے جبکہ دو ججز نے وزیراعظم کو نااہل کرنے کا نوٹ لکھا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں