The news is by your side.

Advertisement

سندھ اسمبلی اجلاس: پی ٹی آئی ارکان نے اپنے ناراض ارکان کی پٹائی کردی

کراچی: سینیٹ الیکشن سے ایک روز قبل سندھ اسمبلی میں ہونے والی بدترین ہنگامہ آرائی نے کئی سوالات کو جنم دے دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سندھ اسمبلی کا اجلاس شروع ہوتے ہی شدید ہنگامہ آرائی کا شکار ہوا، حکومتی اور اپوزیشن ارکان اجلاس میں ایک دوسرے سے دست و گریبان ہوئے اور اسمبلی آداب کو بالائے طاق رکھتے ہوئے ایک دوسرے کے خلاف نازیبا الفاظ استعمال کئے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق سندھ اسمبلی میں ہنگامہ آرائی اس وقت ہوئی جب پی ٹی آئی کے ناراض تین ارکان کے اسمبلی اجلاس میں آئے، اسمبلی آمد پر پی ٹی آئی ارکان نے ناراض ارکان کی پٹائی کردی، ناراض ارکان کی پٹائی کے دوران پی پی ارکان بیچ بچاؤ کرایا، بیچ بچاؤ کےدوران پی پی اورپی ٹی آئی ارکان گتھم گتھا ہوگئے۔

اجلاس کے دوران پی ٹی آئی ،پیپلزپارٹی کے ارکان ناراض ارکان کو اپنی اپنی جانب کھینچتے رہے، اسی دوران پی ٹی آئی ارکان اسمبلی سے کریم گبول کو اپنے ساتھ لے گئے، بعد ازاں پی ٹی آئی کے دو ناراض اراکین اسلم ابڑو اور شہریار شربھی سندھ اسمبلی سے واپس چلے گئے۔

اسمبلی اجلاس کے دوران پی ٹی آئی رکن کریم گبول کی ویڈیو منظر عام پر آئی جس میں انہوں نے الزام عائد کیا کہ انہیں زبردستی پیپلز پارٹی کو ووٹ دینے کا دباؤ ڈالا جارہا ہے، کریم گبول کا کہنا تھا کہ وہ کسی صورت سینیٹ الیکشن میں پی پی پی امیدوار کو ووٹ نہیں دینگے۔

یہ وہی کریم بخش گبول ہیں، جنہوں نے گذشتہ پارٹی فیصلے کے خلاف بغاوت کرتے ہوئے کہا تھا کہ ان کو ووٹ نہیں دوں گا جنھوں نے سینیٹ انتخابات میں پیسے دے کر ٹکٹ لیا، ساتھ ہی انہوں نے اپنے اغوا ہونے کی بھی تردید کی تھی۔

اسمبلی اجلاس میں ہنگامہ آرائی کے بعد پی ٹی آئی ارکان اسمبلی نے سندھ اسمبلی کے باہر سخت احتجاج اور نعرے بازی کی، اس موقع پر اپوزیشن لیڈر حلیم عادل شیخ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے الزام عائد کیا کہ پی پی پی والوں نےاسلم ابڑو اور شہریار شر کو اغوا کررکھا ہے، کریم گبول کو بھی پی پی والوں نے اغواکیاتھا، تشدد کا راستہ نہیں چھوڑا گیا تو ہم تھانے میں ایف آئی آردرج کرائیں گے۔

اپوزیشن لیڈر حلیم عادل شیخ کا کہنا تھا کہ پاکستان کی تاریخ کا آج سیاہ دن ہے، آج سندھ رورہاہے کیونکہ پیپلزپارٹی کے گھٹیا لوگ اسمبلی میں موجود ہے، پی ٹی آئی اراکین اسمبلی نے الزام عائد کیا کہ برہان چانڈیو اور تیمورتالپور نے اسمبلی میں دہشتگردی کی۔

یہ بھی پڑھیں:  اغوا نہیں ہوا؟ پی ٹی آئی رکن کا ویڈیو بیان جاری

واضح رہے کہ گذشتہ روز تحریک انصاف کے ایک اور ناراض رکن شہریار شر کا ایک ویڈیو بیان منظر عام پر آیا تھا، جس میں انہوں نے اپنے ‏اغوا سے متعلق صدر پی ٹی آئی کراچی خرم شیر زمان کے دعوؤں کی تردید کی تھی۔

ویڈیو بیان میں انہوں نے کہا کہ ارے ہمیں کون اغواء ‏کرے گا ہم پارٹی سے مایوس ہیں ہمیں کون اغوا کرے گا، شہریار شر کا کہنا تھا کہ ہم چیختے رہے وزیراعظم صاحب کو کہا اور گورنر سندھ کو شکایت کی، ‏ہماری سنوائی نہیں ہوئی ، گورنر سندھ سے ہم مایوس ہیں ہمیں فنڈز نہیں دئیے جاتے ، سندھ کے ‏مسائل حل نہیں کیے جاتے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں