صدارت کی ذمہ داری ملی توایک صوبے یا پارٹی کا صدرنہیں ہوں گا، عارف علوی
The news is by your side.

Advertisement

صدارت کی ذمہ داری ملی توایک صوبے یا پارٹی کا صدرنہیں ہوں گا، عارف علوی

لاہور : پاکستان تحریک انصاف کے نامزد صدارتی امیدوار عارف علوی کا کہنا ہے کہ صدارت کی ذمہ داری ملی توایک صوبے یا پارٹی کا صدرنہیں ہوں گا، تبدیلی نظر آئے گی لیکن اس میں تھوڑا وقت لگے گا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور میں پی ٹی آئی کے نامزد صدارتی امیدوار عارف علوی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ صوبوں کےدرمیان یکجہتی پیدا کرنا صدرکی ذمے داری ہے، عمران خان کا مشکور ہوں، انہوں نے مجھے صدر کے لئے نامزد کیا۔

عارف علوی کا کہنا تھا کہ عمران خان انسانوں پرتوجہ دیتےہیں اوران کی کوششیں جاری ہیں، تمام صوبوں کے لوگوں کے لئے یکساں مواقع ہونےچاہئیں، عمران خان کی کوششوں کے نتائج تھوڑی دیر میں سامنے آئیں گے۔

رہنما پی ٹی آئی نے کہا کہ جو برسوں پرانی آگ لگی تھی اسے بجھانے میں کچھ وقت لگے گا، تبدیلی نظر آئے گی لیکن اس میں تھوڑا وقت لگےگا، بگاڑ پرانا ہے، بہتری آنے میں کچھ وقت لگے گا۔

صدارتی امیدوار کا کہنا تھا کہ ہم نے اپنے آپ کو خود اٹھانا ہے لیکن اس کیلئے راستے کی ضرورت ہے، راستہ پاکستان تحریک انصاف بنائےگی اورعوام اس پرچلیں گے۔

انھوں نے کہا کہ معیشت سمیت ہر اہم ایشوز پر توجہ دے رہے ہیں، صدارت کی ذمہ داری ملی تو ایک صوبے یا پارٹی کا نہیں ہوں گا، پوری قوم کا نمائندہ بننے کی کوشش کروں گا، بہت سے ایسے معاملات ہیں جس میں کام کی اور ملک میں یکجہتی کو فروغ دینے کی ضرورت ہے۔

دوسری جانب پی ٹی آئی رہنما چوہدری سرور کا کہنا تھا کہ ایم پی ایزکی خواہش تھی عارف علوی3 ستمبر کی شام تشریف لائیں، کل بھی چند گھنٹے کے نوٹس پر ایم پی ایز کو بلایا گیا تھا اور بہت لوگ آئے۔

انھوں نے کہا صدارتی انتخاب کے وقت اسمبلی میں تمام ایم پی ایز موجود ہوں گے، کسی ایم پی اے کی جانب سے کوئی ناراضی نہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں