The news is by your side.

Advertisement

پی ٹی آئی کا بلدیاتی قانون کے خلاف بھرپور احتجاج کا فیصلہ

کراچی: پی ٹی آئی نے بلدیاتی قانون کے خلاف بھرپور احتجاج کا فیصلہ کر لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف نے سندھ میں بلدیاتی قانون کے خلاف بھرپور تحریک چلانے کا فیصلہ کیا ہے، اس سلسلے میں 27 کی بجائے 26 فروری کو گھوٹکی تا کراچی مارچ کا اعلان کیا گیا ہے۔

وفاقی وزیر اسد عمر نے کہا 2023 میں یہاں بھی ہماری حکومت ہوگی، سندھ سے ڈاکو راج کا خاتمہ کریں گے، 13 سال سے سندھ کے عوام کے ساتھ ظلم ہو رہا ہے، حکومت سازی کے لیے مربوط انداز میں کام شروع ہو چکا ہے۔

انھوں نے کہا سندھ حکومت کے ترجمان کہتے ہیں لوگ باہر سے علاج کے لیے سندھ آتے ہیں، یہ بیان سندھ حکومت کی جانب سے لوگوں کے زخموں پر نمک چھڑکنا ہے، سندھ میں میرٹ نہیں، نوکری چاہیے تو سائیں کے پاس آئیں پرچی ملے گی، وزیر اعظم عمران خان سندھ کے حالات کو بہتر کرنا چاہتے ہیں، سب متفق ہیں کہ سندھ کے عوام کو ڈاکو راج سے آزاد کرانا ہے۔

علی زیدی نے کہا کہ زرداری گاڈ فادر بن کر بیٹھا ہے، اور چیف منسٹر کو منشی بنا دیا ہے، ہم سمجھتے تھے مراد علی شاہ باہر سے پڑھ کر آئے ہیں تو کچھ اچھا ہوگا، کراچی کو ٹھیک کرنے کے لیے قابض ڈاکو کو فارغ کرنا پڑے گا، سب کو پتا ہے کہ سندھ میں سیاسی جماعت نہیں زرداری مافیا کی حکومت ہے۔

انھوں نے مزید کہا میں نے جیکب آباد، لاڑکانہ سمیت اندرون سندھ کے کئی شہروں کا دورہ کیا، ان لوگوں نے سندھ میں پی اے سی کمیٹی میں کسی کا ممبر نہیں رکھا، سب سے زیادہ انسانی حقوق کی خلاف ورزی بلاول کی جماعت کرتی آئی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں