site
stats
پاکستان

مریم نواز کس حیثیت سےسرکاری معاملات میں مداخلت کرتی ہیں؟ پی ٹی آئی کا سوال

اسلام آباد : تحریک انصاف نے مریم نواز کے سرکاری امور میں مداخلت پر سوال اٹھا دیئے،  پی ٹی آئی کا کہنا ہے کہ بنا عہدہ اور اسمبلی رکن نہ ہونے کے باجود مریم نواز سرکاری معاملات اور قومی دولت کس حیثیت س خرچ کررہی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق تحریک انصاف نے مریم نواز کے کردار پر جواب مانگ لیا، مریم نواز منتخب رکن ہیں نہ کوئی سرکاری عہدیدار ہیں! کس حیثیت سے سرکاری معاملات میں مداخلت کرتی ہیں؟

تحریک انصاف کی رہنما عندلیب عباس نے وزیر اعظم کے پرنسپل سیکریٹری کو خط لکھا، جس میں مریم نواز کے وزیر اعظم کے دفتر اور قومی دولت کے استعمال پر وضاحت طلب کرلی، عندلیب عباس کا کہنا ہے کہ اختیارات اورقومی دولت میں مداخلت کرپشن اورلا قانونیت  ہے۔

خط میں  پوچھا گیا ہے کہ مریم نواز نے بناعہدہ قومی سلامتی کے معاملات پر سرکاری موقف کیوں پیش کیا؟ مریم نواز وزیر اعظم ہاؤس میں غیرملکی سفیراورمندبین سے کیوں ملتی ہیں؟ مریم نواز کی سربراہی میں نوے سے زائد افراد کے میڈیا سیل کے اخراجات وزارت اطلاعات کیوں دے رہی ہے؟

تحریک انصاف کے خط میں کہا گیاکہ ثابت ہوگیا جندال مودی کا پیغام لائے تھے، دورہ نجی نہیں تھا۔

عندلیب عباس نے مریم نواز کے اختیارات اور قومی دولت کے استعمال کو کرپشن اور لاقانونیت قرار دیتے ہوئے اکیس دن میں جواب طلب کیا ہے۔


مزید پڑھیں : مریم نواز نے کس حیثیت سے خواتین اراکین سے خطاب کیا؟ فواد چوہدری


اس سے قبل پاکستان تحریک انصاف کے ترجمان فواد چوہدری نے خواتین اراکین اسمبلی سے مریم نوازکے خطاب پر تعجب کا اظہار کیا تھا، انہوں نے سوال کیا تھا کہ مریم نواز کو کس حیثیت میں اراکین اسمبلی سےخطاب کے لیے مدعو کیا گیا تھا۔

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ اسپیکر قومی اسمبلی کا کردار اس معاملے پر شرمناک ہے۔ مریم نواز کے خطاب کی کوئی اہمیت ہے نہ اس میں کوئی اثر ہے۔ انہوں نے یہ سوال بھی کیا کہ تعلیمی اداروں میں مریم بی بی کی مداخلت کس قانون کے تحت جاری ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top