The news is by your side.

Advertisement

پی ٹی آئی کا مریم نواز کو ن لیگ کا نائب صدر بنانے کا فیصلہ عدالت میں چیلنج کرنے کا فیصلہ

لاہور‌‌: پاکستان تحریک انصاف نے سابق وزیراعظم نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز کو ن لیگ کا نائب صدر بنانے کا فیصلہ عدالت میں چیلنج کرنے  کا  فیصلہ کرلیا، شاہ محمودقریشی نے کہا سزایافتہ کوپارٹی عہدہ نہیں دیاجاسکتاہے، مریم نوازکوسزامعطلی کاعارضی ریلیف ملا ہے، سزا برقرار ہے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف نے سابق وزیراعظم نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز کو ن لیگ کا نائب صدر بنانے کا فیصلہ عدالت میں چیلنج کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

رہنما شاہ محمودقریشی نے کہا سزایافتہ مریم نوازکون لیگ کانائب صدر کیسےبنایاجاسکتاہے۔

شاہ محمودقریشی نے مریم نواز کو پارٹی عہدہ ملنے کے معاملے کو ہر سطح اٹھانے کا فیصلہ کرتے ہوئے کہا عدالت سےسزایافتہ کوپارٹی عہدہ نہیں دیا جا سکتا ہے،مریم نوازکوسزامعطلی کاعارضی ریلیف ملاہے،سزابرقرارہے۔

شاہ محمودقریشی نے پارٹی رہنماؤں اوروکلاسےمشاورت شروع کردی اور الیکشن کمیشن سےبھی رجوع کرنے پرغور کیا جا رہا ہے۔

مزید پڑھیں : شہباز شریف نے پارٹی عہدے داروں کے ناموں کا اعلان کر دیا، مریم نواز نائب صدر مقرر

اس سے قبل معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے کہا تھا کہ سپریم کورٹ سے سزا یافتہ مریم نواز کو ن لیگ کا نائب صدر مقرر کردیا گیا، مریم نواز کو ن لیگ کا نائب صدر بنانا آئین سے مذاق ہے۔

یاد رہے پاکستان مسلم لیگ ن کی تنظیم نو کے تحت پارٹی عہدے داروں کا اعلان کیا تھا، جس کے مطابق سابق وزیر اعظم نواز شریف کی صاحب زادی مریم نواز پارٹی کا نائب صدر مقرر کیا گیا تھا جبکہ سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی مسلم لیگ ن کے سینئر نائب صدر ہوں گے۔

اعلامیے کے مطابق مریم اورنگ زیب سیکریٹری اطلاعات اور ترجمان مقرر کی گئیں، رانا ثنا اللہ مسلم لیگ ن پنجاب کے صدر ہوں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں