The news is by your side.

Advertisement

عدالت میں تصویر بنانے پر پی ٹی آئی کارکن کو ہتھکڑیاں لگ گئیں

سکھر: صوبہ سندھ کے تیسرے بڑے شہر سکھر کی عدالت میں تصویر بنانے پر پاکستان تحریک انصاف کے کارکن کو جج نے ہتھکڑیاں ڈلواکر بٹھادیا۔

تفصیلات کے مطابق سکھر کی عدالت میں تحریک انصاف کا امیدوار کاغذاتِ نامزدگی جمع کرانے آیا تھا، اس دوران ایک کارکن تصویر بنانے لگا۔

جج نے پولیس کو حکم دیا کہ کمرۂ عدالت کے اصولوں کی خلاف ورزی کرنے کے جرم میں پی ٹی آئی کارکن کو ہتھکڑیاں لگادی جائیں تاکہ اسے سبق حاصل ہو۔

واضح رہے کہ کمرۂ عدالت میں تصویر اور فوٹیج بنانے پر پابندی عائد ہے، عدالتی کارروائی کی تصاویر نہیں اتاری جاسکتیں، نہ ہی ویڈیو بنائی جاسکتی ہے۔

معلوم ہوا ہے کہ تحریک انصاف کا مذکورہ کارکن اس قانون سے بے خبر تھا، عدالت نے سرزنش کرتے ہوئے اسے کمرۂ عدالت ہی میں بیٹھنے کی سزا دی۔

سکھر: سنگ دل بیٹوں کا بہیمانہ تشدد، بوڑھی ماں کو کچرے کے ڈھیرپرپھینک گئے


پی ٹی آئی کے کارکن کو کاغذاتِ نامزدگی جمع کرائے جانے تک عدالت کے کمرے میں ہتھکڑیوں کے ساتھ بیٹھنا پڑا، بعد ازاں اسے ہتھکڑیاں کھول کر جانے دیا گیا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں