The news is by your side.

Advertisement

سرکاری ٹی وی کا سزا یافتہ نواز شریف اور مریم نواز کی تقاریر نہ دکھانے کا فیصلہ

ریاستی اداروں کے خلاف بیانات اور تقاریر لائیو نہیں دکھائی جاسکتیں، پیمرا

لاہور: پاکستان ٹیلی ویژن نے ایون فیلڈ ریفرنس کیس میں سزا یافتہ مجرم سابق وزیر اعظم نواز شریف اور ان کی صاحب زادی مریم کی تقاریر نہ دکھانے کا فیصلہ کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق سرکاری ٹی وی کے کنٹرولر نے مراسلہ جاری کرتے ہوئے کہا ہے سرکاری ٹی وی کے کسی بھی پروگرام میں سزا یافتہ شخص کو دکھانے کی اجازت نہیں۔

مراسلے میں کنٹرولر نے ہدایت جاری کی ہے کہ سزا یافتہ شخص سے متعلق اشتہارات بھی ٹی وی پر نہ دکھائے جائیں، خیال رہے کہ بعض چینلز سیاست دانوں کی توہین آمیز پریس کانفرنس لائیو نشر کر رہے ہیں۔

دریں اثنا پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی (پیمرا) نے سزا یافتہ نواز شریف اور مریم نواز کی اداروں کے خلاف توہین آمیز تقاریر پر نوٹس لے لیا ہے۔

پیمرا کا کہنا ہے کہ ریاستی اداروں کے خلاف بیانات اور تقاریر لائیو نہیں دکھائی جاسکتیں، عدلیہ اور مسلح افواج کے خلاف تقاریر دکھانا قواعد کی خلاف ورزی ہے۔

پی ٹی وی ایم ڈی تقرری کیس: معاملہ نیب کو بھجوانے کا عندیہ


واضح رہے کہ ایون فیلڈ ریفرنس میں سزا پانے والے سابق وزیر اعظم نواز شریف اور ان کی بیٹی مریم کی وطن واپسی پر ان کی گرفتاری کے معاملات ملک بھر میں زیرِ بحث ہیں، دوسری طرف ریاستی اداروں کو اس بات کا بھی خدشہ ہے کہ مجرم سیاسی ہنگامہ آرائی کے ذریعے فائدہ اٹھانے کی کوشش کر سکتے ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں