The news is by your side.

Advertisement

سرکاری اسکولوں کے اساتذہ کا مستقلی کےلیے احتجاج، پولیس کی شیلنگ

کراچی: سرکاری اسکولوں میں کنڑیکٹ پر کام کرنے والے اساتذہ نے پریس کلب کےباہر احتجاج کیا اوراپنی فریاد حکمرانوں تک پہنچانے کے لیے وزیراعلیٰ ہاؤس جانے کی کوشش کی تتاہم پولیس نے مظاہرین پر دھاوا بول دیا۔

تفصیلات کے مطابق سرکاری اسکولوں میں پڑھنے والے طلبہ کو زیور تعلیم سے آراستہ کرنے والے اساتذہ کی جانب سے کراچی پریس کلب کے باہر احتجاج کیا گیا ، اساتذہ اپنی مستقلی کےلیے صدائے احتجاج بلند کررہے تھے۔

پریس کلب کے باہر احتجاج کرتے اساتذہ نے جب وزیر اعلیٰ ہاؤس کی جانب پیش قدمی کی تو پولیس نے مظاہرین کوریڈ زون میں داخل ہونے سے روکنے کےلیے لاٹھی چارج اور آنسو گیس کی شیلنگ شروع کردی، جس کے باعث ایک ٹیچر بے ہوش ہوگیا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پولیس نے مظاہرین کو منتشرکرنےکیلئےواٹرکینن بھی طلب کرلیا ہے تاہم مظاہرین تمام رکاوٹیں توڑتےہوئے آگے بڑھ گئے پولیس مظاہرین کو روکنے میں ناکام رہی۔

مظاہرین کی جانب سے سندھ حکومت کے خلاف اور کنٹریکٹ ملازمین کو مستقل کرنے کےلیے شدید نعرے بازی کی جارہی ہے۔

یاد رہے کہ اس قبل مارچ 2019میں بھی سندھ کے سرکاری اسکولوں کے اساتذہ کی جانب سے ٹائم اسکیل، مستقلی اور  پروموشن کے لئے احتجاج ہوتے رہے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں