The news is by your side.

Advertisement

محکمہ ایکسائز میں انسپکٹرز ، کانسٹیبل اور کلرک کی ترقیوں میں بے ضابطگیوں کا انکشاف

لاہور : محکمہ ایکسائز میں انسپکٹرز ، کانسٹیبل اور کلرک کی ترقیوں میں بے ضابطگیوں کا انکشاف سامنے آیا ، جس کے بعد 33 ایکسایز ملازمین سے ریکارڈ طلب کرلیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن پنجاب میں ایک بار پھر بڑی بے ضابطگیاں سامنے آگئی، محکمہ ایکسایز میں انسپکٹرز کانسٹیبل و کلرک کی ترقیوں میں بے ظابطگیوں کا انکشاف ہوا۔

ڈائریکٹر ایکسائز محمد آصف نے 33 ایکسایز ملازمین سے ریکارڈ طلب کرلیا اور اس حوالے سے نوٹیفیکیشن بھی جاری کردیا ہے۔

ڈی جی ایکسایز صالحہ سعید نے ڈائریکٹر محمد آصف کو انکوائری افسر مقرر کردیا ، ڈایرئکٹر محمد آصف نے لاہور ریجن اے ، بی ،سی اور ڈی کے ڈایرئکٹرز سے ریکارڈ طلب کرلیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ن لیگ کے دور میں سابقہ افسران نے رشوت لیکر انسپکٹرز کانسٹیبل کو غیر قانونی طور پر آوٹ آف ٹرن ترقیاں دیں۔

خیال رہے ایکسائز ملازمین کی غیر قانونی ترقیوں کے حوالے سے وزیر اعظم پورٹل پر بھی کئی ماہ قبل شکایت درج کی جاچکی ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں