site
stats
پاکستان

پنجاب : لاشوں کے کیمیکل کی ملاوٹ والا ہزاروں لیٹردودھ برآمد

لاہور : پنجاب میں تین ہزار لیٹرمضر صحت دودھ پکڑا گیا۔ دودھ میں لاشوں پرلگانے والے کیمیکل کی ملاوٹ پائی گئی۔ پنجاب فوڈ اتھارٹی حکام نے لاہوراورفیصل آباد میں تین ہزار لٹردودھ ضائع کردیا۔

تفصیلات کے مطابق مضر صحت دودھ بیچنے والوں کی شامت آگئی، سپریم کورٹ کی ہدایت پر پنجاب فوڈ اتھارٹی نے لاہور اور فیصل آباد میں کارروائی کا آغاز کردیا۔

لاہور میں صبح سویرے شہر کے داخلی راستوں پر دودھ لے جانے والی گاڑیوں کی چیکنگ کی گئی، دوران چیکنگ دودھ میں لاشوں پرلگائے جانے والے کیمیکل فارمالین، سوڈیم کلورائڈ اور پانی کی ملاوٹ کا انکشاف ہوا جس پر مزید کارروائی کرتے ہوئے متعلقہ حکام نے متعدد افراد کو حراست میں لے لیا۔

اس دوران دو ہزار لیٹر ناقص دودھ موقع پر ضائع کردیا گیا۔ فیصل آباد میں بھی آٹھ سو لیٹر مضر صحت دودھ پکڑا گیا فوڈ اتھارٹی کے مطابق اس دودھ میں بھی یہی اجزاء پائے گئے۔ متعدد افراد کو حراست میں لے کر محکمہ جاتی کارروائی کی جا رہی ہے۔

دریں اثناء پنجاب میں کارروائی کے باوجود کراچی میں انتظامیہ نے ڈیری فارمرز کے آگے گھٹنے ٹیک رکھے ہیں، ڈیری فارمز نے دودھ کی قیمت میں چار روپے فی لیٹر من مانہ اضافہ کردیا ہے۔

مزید پڑھیں : پنجاب فوڈاتھارٹی کی کارروائی،2000لیٹرغیرمعیاری دودھ برآمد

واضح رہے کہ اس سے تین ماہ قبل بھی پنجاب فوڈ اتھارٹی نے شہریوں کی شکایات پر ٹھوکر نیاز بیگ کے قریب لاہور میں آنے والی 70 سے زائد دودھ کی گاڑیوں کی چیکنگ کی۔

مزید پڑھیں : کراچی: دودھ کی قیمت میں‌ من مانا اضافہ، کریک ڈاؤن کا حکم

اس دوران 30 کے قریب گاڑیوں سے2000 لیٹر سے زائد غیر معیاری اور مضر صحت دودھ کو قبضے میں لے کر ضائع کر دیا گیا اور درجنوں ذمہ دار افراد کو حراست میں لیا گیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top