The news is by your side.

Advertisement

پنجاب حکومت نے نوازشریف کی رہائش گاہ سے سیکیورٹی کیمرے اورلائٹیں ہٹا دیں

لاہور : نواز شریف کی رہائش گاہ جاتی امراء کے قریب لگائے گئے سیکیورٹی کیمرے اور اضافی لائٹیں اتار لی گئیں، کروڑوں روپے مالیت کے یہ سی سی ٹی وی کیمرے پنجاب حکومت نے لگوائے تھے۔

تفصیلات کے مطابق لاہور میں سابق وزیر اعظم کی رہائش گاہ رائیونڈ کے اطراف سے اچانک کروڑوں مالیت کے سی سی ٹی وی کیمرے اور اضافی لائٹس ہٹا دی گئیں ہیں، حکومت پنجاب نے سرکاری خزانے سے کروڑوں کے کیمرے لگائے تھے، تاہم یہ واضح نہیں ہوسکا کہ یہ اقدام کس کے کہنے پر اٹھایا گیا۔

اس سے قبل مریم نواز نے اپنے ٹوئٹر پیغام میں چیف جسٹس کے سیکیورٹی سے متعلق احکامات پر تنقید کرتے ہوئے کہا تھا کہ مائی لارڈ! دہشت گردی کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر دیکھنے اور اس پر کاری ضرب لگانے والے وزیر اعظم کی سیکیورٹی چھین لو،خدانخواستہ اُسے کچھ ہوا تو ذمہ دار صرف آپ ہوں گے۔

مزید پڑھیں: مائی لارڈ! دہشت گردی کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر دیکھنے والے وزیراعظم کی سیکیورٹی چھین لو،مریم نواز

واضح رہے کہ دو روز قبل چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے ملک بھر میں اہم شخصیات کی سیکیورٹی کے لیے تعینات پولیس نفری کو واپس بلانے کا حکم دیا تھا، لیکن اس میں سیکیورٹی کیمروں سے متعلق کوئی ہدایات نہیں دی گئی تھی۔

علاوہ ازیں پنجاب میں دو ہزار سے زائد مختلف سیاسی، سماجی اور مذہبی و انتظامی شخصیات سے پولیس سیکورٹی واپس لیتے ہوئے پانچ ہزار سے زائد پولیس جوانوں کو واپس بلایا گیا ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں