The news is by your side.

Advertisement

تعلیمی سرگرمیاں بحال کرنے سے متعلق ایس اوپیزجاری

لاہور : حکومت پنجاب نے تعلیمی سرگرمیاں بحال کرنے سے متعلق ایس اوپیزجاری کردیں ، جس میں کہا گیا ہے کہ بچوں اوراساتذہ کے تحفظ کیلئے خاص احتیاط کرنا ہوگی، تعلیمی اداروں میں سماجی فاصلے کو برقرار نہ رکھنا کورونا کی وجہ بن سکتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق حکومت پنجاب نے تعلیمی سرگرمیاں بحال کرنے سے متعلق ایس اوپیزجاری کردیں ، اس حوالے سے سیکریٹری پرائمری اینڈسیکنڈری ہیلتھ کیئر نے نوٹیفکیشن جاری کیا۔

سیکریٹری پرائمری سیکنڈری ہیلتھ نے کہا کہ کورونا متاثرہ شخص کے کھانسنے، چھینکنے پر ذرات سے پھیل سکتا ہے، تعلیمی اداروں میں سماجی فاصلے کو برقرار  نہ رکھنا کورونا کی وجہ بن سکتا ہے اور کورونا کسی بھی فرد پر حملہ آور ہوسکتا ہے۔

کیپٹن (ر)عثمان کا کہنا تھا کہ بچوں اوراساتذہ کے تحفظ کیلئے خاص احتیاط کرنا ہوگی، اسکول انتظامیہ ایسے اسٹاف اور بچوں کوالگ کریں جوکورونا کا شکار رہ چکے  ہیں ، بچوں کو احتیاطی تدابیرسے آگاہ کریں اور کسی چیز کو پکڑنے یا چھونے سے پرہیزکریں۔

سیکریٹری پرائمری سیکنڈری ہیلتھ نے کہا کہ بچوں کوبار بارہاتھ صابن سےاچھی طرح 40سیکنڈ تک دھونے کی تلقین کریں، اسکول میں بچوں کو آگاہ کیا جا ئے وہ گھر  پہنچنے پردیگر اہلِخانہ سےمیل جول سے پہلے نہائیں اور بغیر ہاتھ دھوئے آنکھوں،ناک اور منہ کو چھونے سے مکمل پرہیزکریں۔

ان کا کہنا تھا کہ تمام تعلیمی اداروں میں بچوں، اسٹاف کیلئے ہینڈسینیٹائزر، ماسک لازمی رکھا جائے، کھانسی یا سانس سے دوچار اسٹاف ، بچوں کو صحت یاب ہونے تک گھر رہنےکی تلقین کریں اور 6 فٹ کےفاصلے کو قائم رکھنےکیلئےاسکول کی حدودمیں نشانات لگائیں۔

کیپٹن (ر)عثمان نے کہا کہ وباختم ہو جانے تک تمام اسکولزمیں اسمبلی سےمکمل طور پرگریزکیا جائے، چھٹی کے وقت ایک سے زائد داخلی، خارجی راستوں کا استعمال کیا جائے اور ہاتھ ملانے، بغل گیر ہونےسے پرہیزکریں۔

سیکریٹری پرائمری سیکنڈری ہیلتھ کا کہنا تھا کہ چھوٹی جماعتوں کےبچوں کو کھیل کود کی سرگرمیوں میں مشغول نہ کریں، دوران لیکچرماسک پہننا لازمی ہے ، ماسک کے استعمال سے بچوں کو آگاہ کریں، کھانستے یا چھینکتے وقت بچوں کومنہ ٹشو پیپر، رومال یاکہنی سے ڈھانپنے کی تلقین کریں۔

ایس اوپیز کے مطابق ماسک کو باربار ہاتھ لگانےسےگریزکریں، گیلا ہونے پرکوڑا دان میں ضائع کر دیں، تعلیمی اداروں میں تما م انڈورگیم ایریاز ، پلے گراؤنڈز ، جھولے  بند رہیں گے جبکہ اسکول انتظامیہ یقینی بنائے اسکول وین ،بس، رکشہ میں گنجائش کا صرف 50 فیصد حصہ ہو۔

Comments

یہ بھی پڑھیں