The news is by your side.

Advertisement

سندھ چینی کا مصنوعی بحران پیدا کررہا ہے، ترجمان حکومت پنجاب

لاہور : ترجمان حکومت پنجاب حسان خاور کا کہنا ہے کہ مارکیٹ میں چینی کا وافر سٹاک موجود ہے، سپلائی کی شارٹیج نہیں ، اس سال کرشنگ سیزن لیٹ کر کے سندھ مصنوعی بحران پیدا کررہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ترجمان حکومت پنجاب حسان خاور نے چینی کی قیمتوں میں اضافے پر اپنے بیان میں کہا ہے کہ مارکیٹ میں چینی کا وافر سٹاک موجود ہے، سپلائی کی شارٹیج نہیں ہے، مارکیٹ میں درآمد شدہ چینی 90 روپے کلو کے حساب سے مل رہی ہے۔

ترجمان حکومت کا کہنا تھا ک حکومت نے ایک لاکھ دس ہزار ٹن چینی لفٹ کر لی ہے، 52 ہزار ٹن چینی فروخت ہو چکی،30ہزارٹن اسٹاک میں موجود ہے اور 23ہزارٹن چینی کراچی سے آ رہی ہے جبکہ 34 ہزارٹن لنگر اندازبحری جہازوں میں موجود ہے۔

حسان خاور نے کہا کہ یوٹیلیٹی اسٹورز پر 30 اورپرائیویٹ اسٹاک40سے 50ہزار ٹن تک ہے، کرشنگ سیزن شروع ہونے تک چینی کا اسٹاک ضروریات کے لیے کافی ہے، وفاق اور حکومت پنجاب چینی پر پانچ ارب روپے کی سبسڈی دے رہی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ لوکل چینی کی گراں فروشی پر حکومت سخت ایکشن لے رہی ہے، پہلے گراں فروشی پر حکومت شوگر ملوں کا سٹاک اٹھا لیتی تھی، اب یہ معاملہ عدالت میں زیر سماعت ہونے کے باعث ایسا نہیں کیا جا سکتا۔

ترجمان حکومت نے مزید کہا کہ حکومت ڈیلرز اور بروکرز کے خلاف بھرپور ایکشن لے رہی ہے، کچھ ملوں کو ریکارڈ مہیا نہ کرنے پر سیل بھی کیا جا چکا ہے، اس سال کرشنگ سیزن لیٹ کر کے سندھ مصنوعی بحران پیدا کررہاہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں