The news is by your side.

Advertisement

محکمہ صحت پنجاب کا زبردست اقدام، قابلیت پر پورا نہ اترنے والے ڈاکٹرز کے گاؤن پہننے پر پابندی عائد

لاہور: محکمہ صحت پنجاب نے قابلیت پر پورا نہ اترنے والے ڈاکٹرز کے گاؤن پہننے پر پابندی عائد کردی۔

تفصیلات کے مطابق محکمہ صحت پنجاب نے تمام سرکاری اسپتالوں کو مراسلہ جاری کیا جس میں کہا گیا ہے کہ تعلیمی قابلیت پرپورا نہ اترنےوالے ڈاکٹرز آئندہ ڈیوٹی اوقات میں گاؤن نہیں پہنیں گے۔

محکمہ صحت کی جانب سے جاری نوٹی فکیشن میں بتایا گیا ہے کہ جعلی ڈاکٹرز سرکاری اسپتالوں میں گاؤن پہن کر گھومتے اور مریضوں کو نجی اسپتالوں میں علاج کرانے پر مجبور کرتے ہیں۔

مزید پڑھیں: ڈاکٹر یاسمین راشد کا محکمہ صحت میں روبو کال سروس شروع کرنے کا اعلان

نوٹی فکیشن میں بتایا گیا کہ جعلی افراد مریضوں کے سامنے خود کو ڈاکٹر ظاہر کرتے اور سرکاری اسپتال کے علاوہ پرائیوٹ کلینک میں بھی علاج کروانے پر قائل کرتے ہیں جہاں غریب مریضوں سے ٹیسٹوں یا معائنے کی ناجائز فیس وصول کی جاتی ہے۔

محکمہ پنجاب نے متعلقہ ڈسٹرکٹ ہیلتھ اتھارٹی کو پابند کیا ہے کہ وہ ملازمین کو کارڈ جاری کریں، ڈیوٹی کے دوران سرکاری اسپتالوں میں ڈاکٹرز اور عملے کا ملازمت کارڈ پہننا ضروری ہوگا۔

نوٹی فکیشن میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ کارڈ پر ڈاکٹر اور دوسرے ملازم کا عہدہ سمیت دیگر تفصیلات درج ہوں گی، متعلقہ حکام اسپتالوں کا اچانک دورہ کر کے معائنہ کریں گے۔

یہ بھی پڑھیں: پنجاب حکومت کا صوبے میں5 نئے اسپتال بنانے کا فیصلہ

پنجاب حکومت نے ساتھ میں یہ بھی اعلان کیا کہ سرکاری اسپتالوں میں کام کرنے والے تمام ڈاکٹرز، پیرا میڈیکل اسٹاف اور ملازمین ڈیوٹی اوقات ختم ہونے کارڈ انتظامیہ کو واپس کریں گے جو انہیں اگلے روز ڈیوٹی شروع ہونے پر دیا جائے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں