The news is by your side.

Advertisement

زیادتی کیس، ’’ملزم عابد پر آدھے سے زیادہ کیسز ریپ کے ہیں‘‘

لاہور: صوبائی وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان کا کہنا ہے کہ عابد اور شفقت گجرپورہ واقعے کے مرکزی ملزم ہیں، ملزم عابد پر آدھے سے زیادہ کیسز ریپ کے ہیں۔

اے آر وائی نیوز سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے وزیر اطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان کا کہنا تھا کہ ملزم شفقت کو گرفتار کرلیا گیا ہے، عابد کو بھی جلد گرفتار کرلیا جائے گا، دونوں ملزمان مل کر واردات کرتے تھے۔

انہوں نے بتایا کہ عابد کے پاس 5 سمیں تھیں، 4 اس کے اپنے نام پر تھیں، پانچویں سم سے عابد رابطے کرتا تھا لیکن وہ بھی بند کردی گئی تھی، گاڑی کا شیشہ توڑنے کے دوران عابد کا ہاتھ زخمی ہوا، گاڑی پر موجود خون سے اس کا ڈی این اے سیمپل لیا گیا۔

فیاض الحسن چوہان نے بتایا کہ عابد پر 2013 میں بھی ریپ کا کیس درج ہوچکا ہے، ملزم پر آدھے سے زیادہ کیسز زیادتی کے ہیں لیکن وہ بچتا رہا ہے، ملزم کے خلاف 13 وارداتوں کا مقدمات درج ہیں۔

مزید پڑھیں: گجرپورہ زیادتی کیس، گرفتار ملزم شفقت کے سنسنی خیز انکشافات

صوبائی وزیر نے بتایا کہ عابد اور شفقت دونوں مل کر ڈکیتی کی وارداتیں کرتے تھے، واقعے والے دن بھی دونوں ملزمان ڈکیتی کی نیت سے موجود تھے، ملزمان جائے وقوعہ سے گزرنے والی ٹریکٹر ٹرالیوں کو لوٹتے تھے۔

خیال رہے کہ چند روز قبل گجرپورہ موٹروے پر خاتون کو بچوں کے ہمراہ زیادتی کا نشانہ بنایا گیا تھا، زیادتی کیس میں متعدد گرفتاریاں عمل میں آئی ہیں جبکہ مرکزی ملزم عابد علی تاحال فرار ہے جس کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جارہے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں