میاں محمود الرشید نے پولیس کے خلاف اغوا کا مقدمہ درج کرا دیا -
The news is by your side.

Advertisement

میاں محمود الرشید نے پولیس کے خلاف اغوا کا مقدمہ درج کرا دیا

لاہور: صوبائی وزیرِ ہاؤسنگ میاں محمود الرشید نے پولیس کے خلاف اپنے بیٹے میاں حسن کے اغوا کا مقدمہ درج کرا دیا، ان کا کہنا تھا کہ بیٹے کے خلاف مقدمہ من گھڑت ہے۔

تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی رہنما میاں محمود الرشید کے بیٹے کے خلاف پولیس کی جانب سے اہل کاروں پر تشدد اور اغوا کے مقدمے کے اندراج کے بعد صوبائی وزیر نے بھی پولیس کے خلاف مقدمہ درج کرا دیا۔

پولیس نے بیٹے سے معافی مانگی تھی جس پر وہ تھانے نہیں گیا

صوبائی وزیرِ ہاؤسنگ کہتے ہیں بیٹے حسن کے خلاف من گھڑت اور جھوٹا مقدمہ درج کیا گیا، ٹی پارٹی میں جانے والے بیٹے کے دوست علی پر پولیس اہل کاروں نے تشدد کیا۔

میاں محمود الرشید کہتے ہیں کہ پولیس نے علی سے پچاس ہزار مانگے، علی نے دو ہزار روپے دیے، دو پولیس اہل کار بھاگ گئے ایک کو دوستوں نے پکڑلیا۔


یہ بھی پڑھیں:  پی ٹی آئی رہنما محمود الرشید کے بیٹے کے خلاف پولیس اہل کاروں کے اغوا کا مقدمہ درج


وزیرِ ہاؤسنگ پنجاب کہتے ہیں کہ پولیس تشدد کے بعد بیٹا جائے وقوعہ پر پہنچا، پولیس کے معافی مانگنے پر حسن تھانے نہیں گیا۔

خیال رہے کہ میاں حسن کے خلاف پولیس کی جانب سے درج مقدمے میں کہا گیا ہے کہ انھوں نے مبینہ طور پر اہل کاروں کو تشدد کے بعد اغوا کیا، ملزمان نے اہل کاروں سے اسلحہ اور وائرلیس چھین کر پھینک دیے۔ ڈی آئی جی انیسٹی گیشن کا کہنا تھا کہ ملزمان کو گرفتار کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں