The news is by your side.

Advertisement

وزیراعظم کا دورہ لاہور: پنجاب حکومت میں کام نہ کرنے والے وزرا کی فراغت کا خطرہ ٹل گیا

لاہور : پنجاب حکومت میں کام نہ کرنے والے وزرا کی فراغت کا خطرہ ٹل گیا، وزرا کارکردگی رپورٹ پنجاب بجٹ کے بعد پیش کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت اجلاس میں وزرا کی کارکردگی رپورٹ پیش نہیں کی جائے گی  اور نہ وزیر اعظم کے دورہ لاہور کے دوران کسی وزیر کو فارغ یا تبدیل کیا جائے گا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ وزرا کارکردگی رپورٹ پنجاب بجٹ کے بعد پیش کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، پنجاب میں 2 سالا کارکردگی کی بنیاد پر 6 سے 8 وزرا کی تبدیلی کا امکان ہے۔

یاد رہے وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے صوبائی وزرا سے 2 سالہ کارکردگی کی رپورٹ مانگی تھی ، جس کے بعد کارکردگی نہ دکھانے والے 6 وزرا پر فراغت کی تلوار لٹکنے لگی۔

مزید پڑھیں : پنجاب کے وزرا سے 2 سالہ کارکردگی رپورٹ مانگ لی گئی

نوٹیفکیشن میں وزرا سے ان کی 2 سالہ کارکردگی کے حوالے سے سوالات پوچھے گئے جب کہ متعلقہ وزارتوں میں کفایت شعاری مہم، عوامی مسائل کے حل سمیت وزارتوں کی کارکردگی بہتر بنانے کے حوالے سے اٹھائے گئے اقدامات سے متعلق پوچھا گیا تھا۔

وزرا سے کہا گیا تھا کہ 2 سال میں تحریک انصاف کے منشور میں شامل نکات پر عملدرآمد کے حوالے سے بنائی جانے والی حکمت عملی اور اقدامات کی تفصیل سے آگاہ کیا جائے۔

پنجاب حکومت کے اہم ذرائع نے بتایا تھا کہ ناقص کارکردگی پر خاتون وزیر سمیت 7صوبائی وزرا کو نااہلی کےباعث ہٹانے جانے کا امکان ہے، ان وزرا کو کابینہ سے فارغ کیا جا سکتا ہے۔

خیال رہے پنجاب میں 2 سالوں کے دوران 2 وزرا کوعہدوں سے ہٹایا گیا ہے، سمیع اللہ چوہدری اور اجمل چیمہ کو ناقص کارکردگی پر عہدے سے ہٹایا گیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں