site
stats
پاکستان

پنجاب یونی ورسٹی کا پروفیسرحزب التحریر سے روابط کے الزام میں گرفتار

لاہور: قانون نافذ کرنے والے اداروں نے پنجاب یونیورسٹی کے ایک پروفیسرکو کالعدم تنظیم حزب التحریر سے روابط کے الزام میں گرفتار کرلیا گیا ہے۔

پولیس ذرائع کے مطابق پروفیسرغالب عطاء کو گزشتہ روزلاہورکے علاقےعلامہ اقبال ٹاؤن میں واقع ان کی رہائش گاہ سے گرفتار کیا گیا ہے، مذکورہ پروفیسرپنجاب یونیورسٹی کے انسٹی ٹیوٹ آف مینجمنٹ سائنسزسےوابستہ ہیں۔

واضح رہے کہ قانون نافذ کرنےوالے ادارے کالعدم تنظیم حزب التحریرکے پیچھے ہیں اورگزشتہ دنوں مذکورہ جماعت کت کراچی شہر کے سربراہ حسام قمر کو بھی گرفتار کیا تھا جوکہ کے الیکٹرک میں جنرل مینجر کے عہدے پرفائز تھا۔

پروفیسر غالب کے ساتھیوں کا کہنا ہے کہ ان میں رفتہ رفتہ تبدیلی آئی پہلے وہ کلین شیو ہوا کرتے تھے پھرداڑھی بڑھالی اورمذہبی جماعتوں سے روابط بڑھانے شروع کردئیے۔ انکے کچھ ساتھیوں کاکہنا تھاکہ حزب التحریرسے ان کے روابط کے بارے میں سب واقف ہیں۔

بتایا گیاہے کہ وہ جمہوریت کواکثر تنقید کا نشانہ بناتے تھے اورملک میں خلافت کے نظام کی باتیں کرتے تھے۔

پنجاب یونیورسٹی کے ترجمان کا کہنا ہے کہ وہ قانون نافذ کرنے والے اداروں کی تفتیش کی راہ میں رکاوٹ نہیں بنیں گے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top