The news is by your side.

Advertisement

پیوٹن کی پارٹی نے سبقت حاصل کر لی

ماسکو: روس پارلیمانی انتخابات میں پیوٹن کی پارٹی کو سبقت حاصل ہو گئی ہے، جب کہ اپوزیشن کی جانب سے دھاندلی کے الزامات سامنے آئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق روس میں ہونے والے عام انتخابات میں ووٹوں کی گنتی میں حکمران ’یونائیٹڈ رشیا پارٹی‘ نے برتری حاصل کر لی، صدر ولادی میر پیوٹن کی جماعت ایک بار پھر حکومت بنانے کے لیے پُر امید ہو گئی ہے۔

حکمران جماعت نے اتوار کو ووٹنگ کے اختتام کے کچھ دیر بعد ہی فتح کا اعلان کر دیا تھا، روس کے مرکزی الیکشن کمیشن کے اعداد و شمار کے مطابق اب تک 64 فی صد بیلٹ پیپرز کی گنتی کے بعد ’یونائیٹڈ رشیا پارٹی‘ 48 فی صد ووٹوں کے ساتھ سب سے آگے ہے۔

ایک جائزے کے مطابق حکمران جماعت کو واضح اکثریت حاصل ہوگی۔

’کمیونسٹ پارٹی آف رشیا فیڈریشن‘ 21.88 فی صد ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے، جب کہ ’لبرل ڈیموکریٹک پارٹی آف رشیا‘ نے اب تک 8.37 فی صد ووٹ حاصل کیے ہیں اور وہ تیسرے نمبر پر ہے۔

دوسری طرف’اے جسٹ روس – فار ٹروتھ سوشل ڈیمو کریٹک پارٹی‘ 7.38 فی صد ووٹوں کے ساتھ چوتھے نمبر پر ہے، وہیں نیو پیپلز پارٹی کو ووٹوں کی گنتی میں اب تک 6.35 فی صد ووٹ ملے ہیں۔

جمعہ کے روز سے جاری ان انتخابات میں دھاندلی کے الزامات بھی عائد کیے جا رہے ہیں، بہت سی شکایات کے مطابق بیلٹ باکس پہلے ہی ووٹوں کی پرچیوں سے بھرے ہوئے تھے۔ روسی حکومت کے ناقدین کو اس الیکشن میں شامل ہونے کی اجازت نہیں تھی اور کئی علاقوں سے بیلٹ بھرنے اور جبری ووٹنگ کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں، تاہم ملک کے الیکشن کمیشن نے ان الزامات کو مسترد کیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں