The news is by your side.

Advertisement

گرفتاری کا خدشہ ، قائم علی شاہ نے عدالت سے رجوع کرلیا

اسلام آباد : سابق وزیر اعلیٰ سندھ قائم علی شاہ نے نیب کی جانب سے گرفتاری کے ڈر سے عدالت سے رجوع کرلیا اور کہا عدالت ضمانت قبل از گرفتاری کی درخواست منظور کرے۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیر اعلیٰ سندھ قائم علی شاہ نے نیب طلبی پر گرفتاری کے خدشے کے پیش نظر اسلام آباد ہائی کورٹ میں عبوری ضمانت کی درخواست دائر کردی ، درخواست بیرسٹر قاسم نواز عباسی کے ذریعے دائر کی گئی۔

درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ نیب نے 4 دسمبر کو طلب کیا ہے گرفتاری کا خدشہ ہے، ضمانت دی جائے، سولر پینل کے ٹھیکوں کے کیس میں نیب نے 3 دسمبر کو طلب کیا ہے، عدالت ضمانت قبل از گرفتاری کی درخواست منظور کرے۔

یاد رہے قومی احتساب بیورو (نیب) نے سابق وزیر اعلی سندھ قائم علی شاہ کو چار دسمبر کو طلب کیا ہے، قائم علی شاہ کو جعلی اکاونٹ کیس میں طلب کیا گیا ہے۔

مزید پڑھیں : جعلی اکاونٹ کیس : سابق وزیراعلی سندھ قائم علی شاہ کی نیب میں طلبی

خیال رہے رواں سال جون میں جعلی اکاؤنٹس کیس میں نیب راولپنڈی نے مرادعلی شاہ اورقائم علی شاہ کیخلاف انکوائری انویسٹی گیشن میں تبدیل کی تھی اور چیئرمین نیب نے منظوری دی تھی

سابق وزیراعلیٰ سندھ قائم علی شاہ اپنا بیان نیب کو ریکارڈ کرا چکے ہیں، بعد ازاں سابق وزیر اعلی قائم علی شاہ نے ضمانت قبل از گرفتاری کے لئے اسلام آباد ہائی کورٹ میں درخواست دائر کی تھی ، درخواست مؤقف اختیار کیا گیا تھا کہ درخواست گزار کا منی لانڈرنگ سے کوئی لینا دینا نہیں سیاسی بنیادوں پر نام شامل کیا گیا اور استدعا کی جب تک کیس کی سماعت مکمل نہیں ہوجاتی قائم علی شاہ کو گرفتار نہ کیا جائے۔

جس پر عدالت نے قائم علی شاہ کی عبوری ضمانت منظور کرلی تھی۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں