The news is by your side.

Advertisement

نوازشریف کا بیانیہ نہیں روکا گیا، تو صورتحال خطرناک ہوجائے گی: قمر زمان کائرہ

لاہور: پیپلزپارٹی کے سینئر رہنما قمر زمان کائرہ نے کہا ہے کہ خواجہ حارث اور میاں صاحب کے دیگر وکلا نے حقائق پر کیس نہیں لڑا، منی ٹریل دے دیتے تو بہت سے سوالات کی ضرورت نہ پڑتی.

ان خیالات کا اظہار انھوں نے اے آر وائی کے پروگرام پاور پلے میں‌ گفتگو کرتے ہوئے کیا. ان کا کہنا تھا کہ نوازشریف کی جانب سےعوامی دباؤ بڑھانے کی کوشش کی گئی، میاں صاحب ڈیل کرنے کے ماہر ہیں، شریف خاندان کی کوشش ہے کہ کسی نہ کسی طریقے سے بات بن جائے.

میاں صاحب ڈیل کرنے کے ماہر ہیں، شریف خاندان کی کوشش ہے کہ کسی نہ کسی طریقے سے بات بن جائے

قمر زمان کائرہ

انھوں نے کہا کہ میاں نواز شریف کا بیانیہ نہیں روکا گیا، تو صورتحال خطرناک ہوجائے گی، جب لیڈر، وزیراعظم، وزیر اداروں کو گالیاں دے رہے ہوں، تو کارکن ایک قدم اور آگے بڑھ جاتے ہیں.

انھوں نے کہا کہ چیف جسٹس سے ہونے والی ملاقات میں رعایت مانگی گئی ہوگی، حکومت کو نہیں، ن لیگ کی قیادت کو عدلیہ سے پریشانی ہے، جس کے لیے رعایت مانگی گئی ہوگی.

ان کا کہنا تھا کہ ن لیگ اپنی مرضی سے تعیناتی اور مرضی کا فیصلہ چاہتی ہے، نوازشریف نےعدلیہ کوجوڈیشل مارشل لاکی بات کہی تو اور کیا باقی رہ گیا۔

پی پی رہنما کا ہنا تھا کہ شہبازشریف کراچی میں کہتے ہیں، لوڈشیڈنگ دو سال میں ختم نہ کی تو نام بدل دینا، موقع ملا تو کراچی کے ہر گھر کو پانی دوں گا، شہبازشریف سے پوچھا جائے کیا پنجاب کے ہر گھر میں پانی دے دیا.


عمران خان کا فیصلہ قابل تحسین ہے، نکالے جانے والے ارکان کو پی پی میں نہیں لیں گے: قمر زمان کائرہ


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں