kaira جن کا انتخابی نشان درندہ ہو انہیں درندہ کہنا کون سا گناہ کیا؟ کائرہ -zaman
The news is by your side.

Advertisement

جن کا انتخابی نشان درندہ ہو انہیں درندہ کہہ کر کون سا گناہ کیا؟ کائرہ

لاہور : پیپلز پارٹی پنجاب کے صدر قمر زمان کائرہ نے کہا ہے کہ درندہ کہنا ہمارے مخالفین کو بڑا ناگوار گزرا ہے، جن کا انتخابی نشان ہی درندہ ہو انہیں درندہ کہہ کر کون سا گناہ کیا؟

یہ بات انہوں نے لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ قمر زمان کائرہ نے کہا کہ کل پیپلز پارٹی نے لاہور میں بڑا اجتماع کیا جس پر کئی جگہوں سے چیخیوں کی آوازیں آرہی ہیں۔

لاہور میں جلسہ کرنے کی جگہیں کم ہو چکی ہیں، موچی دروزاہ جمہوریت پسند لوگوں کی پسندیدہ جگہ ہے، ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ گزشتہ روز جلسے میں شریف برادران کو درندہ کہنا ہمارے مخالفین کو بڑا ناگوار گزرا ہے۔

شہبازشریف عوامی اجتماعات میں پیپلز پارٹی رہنماؤں کیخلاف جو زبان استعمال کرتے رہے ہیں وہ سب جانتے ہیں، شہباز شریف پہلے بھائی کی دولت ہی واپس لے آئیں، جس پارٹی کا انتخابی نشان ہی درندہ ہو، انہیں درندہ کہہ دیا تو کون سا گناہ کر دیا؟ ہم گندگیاں اچھالنے کے عادی نہیں ہیں۔

قمر زمان کائرہ کا مزید کہنا تھا کہ کیپٹن(ر) صفدر کے سسر نے ملک کا سیاسی کلچر ختم کر دیا، ہم ملکی اور بین الاقوامی عدالتوں سے بری ہوچکے ہیں، پیپلز پارٹی لائنوں پر یقین نہیں رکھتی نہ ہی ہم کہیں سے لائن لیتے ہیں۔


مرضی کے جج لگانے والے آج خلاف فیصلہ آنے پران ہی ججز کو گالیاں دے رہے ہیں، کائرہ


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔ 

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں