The news is by your side.

Advertisement

قصرنازمیں ایک ہی خاندان کے چھ افراد کی ہلاکت کامعمہ حل

کراچی: قصر ناز میں کوئٹہ سے تعلق رکھنے والے خاندان کی ہلاکت کا معمہ حل ہوگیا، ہلاکت کا سبب  بریانی نہیں ، بلکہ زہریلا کیمیکل ہے۔

تفصیلات کے مطابق قصر ناز میں ایک ہی خاندان کے چھ افراد کی ہلاکتوں پر رپورٹ سامنے آگئی ہے۔ رپورٹ میں موت کا سبب بریانی نہیں بلکہ  کمرے میں کیا جانے والا زہریلا کیمیکل اسپرے قرار دیا گیا ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ  قصر ناز میں فیو میگیشن سمیت تمام امور کی ذمہ داری پی ڈبلیو ڈی کی ہے۔ ساتھ ہی  بچوں کی موت کا سبب زہریلا کیمیکل المونیم فاسفیٹ بغیر ٹنڈر خریدے جانے کا انکشاف بھی کیا گیا ہے۔

سانحے کی رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ پی ڈبلیو ڈی کے انجینئرز اور عملے نے مروجہ طریقہ کار کے مطابق احتیاطی تدابیر اختیار نہیں کی تھیں۔المونیم فاسفیٹ بغیرمحکمہ جاتی منظوری  کے خریدا گیا ، یہ کیمیکل اسلام آباد ،لاہور ،کوئٹہ یاپشاورمیں نہیں خریداگیا۔

ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ پی ڈبلیوڈی کےحکام نےتیارکی ہے، اس سلسلے میں وفاقی پی ڈبلیو ڈی حکام سےاہم ریکارڈ بھی طلب کرلیا گیا ہے۔

یاد رہے  شہر قائد میں میں ریسٹورنٹ کا مضرصحت کھاناکھانےسےایک ہی خاندان کے5 بچوں سمیت 6  افراد جاں بحق ہوگئے تھے ، جس کے بعد پولیس اور فوڈ اتھارٹی کی ٹیم نے نوبہارریسٹورنٹ اور قصرناز گیسٹ ہاؤس سے بریانی دودھ اور دیگر کھانے کی چیزوں کے سیمپل اکٹھے کرلیے تھے اورہوٹل سیل کرکے 18 ملازمین کوحراست میں لیا تھا، جن سے تحقیقات کی جارہی ہے۔

جاں بحق بچوں میں ڈیڑھ سال کاعبدالعلی، 4سال کاعزیز فیصل ، 6 سال کی عالیہ، 7 سال کا توحید، 9سال کی صلویٰ شامل  تھے جبکہ 28سال کی بینا بھی دم توڑ گئیں تھی۔

بعد ازاں مضرصحت کھانےسے5 بچوں سمیت 6افرادکی ہلاکت کے معاملے پر بنائی گئی تحقیقاتی ٹیم نےکام شروع کرتے ہوئے  قصرنازانتظامیہ سے ڈیوٹی چارٹ اور کیڑے مارنے والی دوائی کےمتعلق تفصیلات بھی طلب کرلیا تھا۔

سول لائن تھانے میں درج کیے جانے والے مقدمے کے متن کے مطابق فیصل زمان اپنے بچوں، اہلیہ اور بہن کے ہمراہ 21 تاریخ پشین سے کراچی روانہ ہوا خصدار کے علاقے میں دوست کے پاس قیام کیا رات 10 بجے کراچی پہنچ کر قصر ناز میں چیک ان کیا اور ہوٹل سے لائی ہوئی بریانی کھائی اور سوگئے۔

مقدمے کے متن میں کہا گیا رات 2 بجے بھائی کی آنکھ کھولی تو دیکھا بھابھی باتھ روم میں گری ہوئی ہیں بھائی کا بیٹا ضلاح الدین بھی الٹیا کر رہا تھا، بھائی اہلیہ کو لے کر فوری طور پر اسپتال چلے گئے صبح 6 سے 7 کے درمیان بہن نے فون کر کے بتایا کہ بچوں کی حالت بھی غیر ہے قصرناز پہنچا تو تین بچے مردہ حالت میں تھے جبکہ دو بچے اور بہن کی حالت غیر تھی بچوں کو اسپتال لے کر پہنچا تو معلوم ہوا کہ پانچوں بچے دم توڑ چکے ہیں اگلے روز رات 2 بجے بہن نے بھی آئی سی یو میں دم توڑا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ مقدمہ جاں بحق بچے کی چچا کے مدعیت میں درج کیا گیا، واقعہ 22 فروری کو پیش آیا، جس میں کوئٹہ سے آنے والا خاندان متاثرہوا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں