The news is by your side.

Advertisement

زہریلے کھانے سے بچوں کی ہلاکت، تحقیقاتی ٹیم دو روز بعد ہی تبدیل

کراچی : قصر ناز میں بچوں کی ہلاکت کے معاملے پر اہم پیشرفت ہوئی ہے، انتظامیہ کیخلاف تحقیقات کرنے والی کمیٹی کو ہی تبدیل کردیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق مضرصحت کھانے سے5بچوں سمیت چھ افراد کی ہلاکت کی تحقیقات کرنے والی ٹیم کو محض دو روز بعد ہی تبدیل کردیا گیا مذکورہ ٹیم قصرناز کی انتظامیہ کیخلاف تحقیقات کررہی تھی۔

اس حوالے سے ذرائع کا کہنا ہے کہ25فروری کوپی ڈبلیو ڈی کے دو افسران پر مشتمل کمیٹی قائم کی گئی تھی، کمیٹی نے دو روز میں اپنی رپورٹ پیش کرنا تھی،27فروری کو ایم بی خٹک کی سربراہی میں کمیٹی تشکیل دی گئی، نئی تحقیقاتی کمیٹی کو ایک ہفتے میں رپورٹ دینے کی ہدایات دی گئیں ہے۔

واضح رہے کہ واقعے کا مقدمہ درج سول لائن پولیس تھانے میں درج کرلیا گیا، مقدمہ نامعلوم افراد کے خلاف جاں بحق بچے کی چچا کے مدعیت میں سول لائن پولیس اسٹیشن میں درج کیا گیا۔

بچوں کے چچا نے ذمہ داروں کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا ہے، واقعہ 22 فروری کو ہوا تھا، جس میں کوئٹہ سے آنے والا خاندان متاثر ہوا۔

ایف آر کے مطابق بد نصیب خاندان کا سربراہ فیصل زمان اپنے بچوں، اہلیہ اور بہن کے ہمراہ 21 تاریخ کو پشین سے کراچی روانہ ہوا، خصدار کے علاقے میں دوست کے پاس قیام کیا، بعد ازاں رات دس بجے کراچی پہنچ کر قصر ناز میں چیک ان کیا اور ہوٹل سے لائی ہوئی بریانی کھائی اور سوگئے۔

مزید پڑھیں: مضر صحت کھانےسے5 بچوں سمیت 6افرادکی ہلاکت، تحقیقاتی ٹیم نےکام شروع کردیا

فیصل زمان کے بھائی کے مطابق رات دو بجے بھائی کی آنکھ کھلی تو دیکھا بھابھی باتھ روم میں گری ہوئی ہیں بھائی کا بیٹا صلاح الدین بھی الٹیاں کر رہا تھا، بھائی اہلیہ کو لے کر فوری طور پر اسپتال لے کر چلے گئے صبح چھ سے7 کے درمیان بہن نے فون کر کے بتایا کہ بچوں کی حالت بھی غیر ہے۔

قصرناز پہنچا تو تین بچے مردہ حالت میں تھے جبکہ دو بچے اور بہن کی حالت غیر تھی، بچوں کو اسپتال لے کر پہنچا تو معلوم ہوا کہ پانچوں بچے دم توڑ چکے ہیں اگلے روز رات دو بجے بہن نے بھی آئی سی یو میں دم توڑدیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں