یہ خصوصیات آپ کے لیڈر ہونے کی نشاندہی کرتی ہیں -
The news is by your side.

Advertisement

یہ خصوصیات آپ کے لیڈر ہونے کی نشاندہی کرتی ہیں

قائدانہ صلاحتیں قدرت کا تحفہ ہیں جو ہر شخص کو نہیں ملتیں۔ بعض لوگ پیچھے رہ کر خاموشی سے کام کرنا پسند کرتے ہیں اور جب انہیں لیڈ کرنے کا کہا جائے تو وہ گھبرا جاتے ہیں۔

قائدانہ صلاحیتیں رکھنے والے افراد ہر قسم کے حالات میں اپنے ساتھ موجود لوگوں کے لیے بہترین رہنما ثابت ہوتے ہیں۔

قائدانہ خصوصیات کچھ تو قدرتی ہوتی ہیں، کچھ تجربوں اور حالات کے باعث پیدا ہوجاتی ہیں۔ دنیا کی تاریخ میں بھی وہی لوگ کامیاب حکمران ثابت ہوئے جن کے اندر قائدانہ صلاحتیں موجود تھیں اور جنہوں نے مشکل حالات میں اپنی قوم کی رہنمائی کی۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ کسی شخص کے اندر موجود یہ خصوصیات اس کے اندر قائدانہ صلاحیتیں موجود ہونے کی نشاندہی کرتی ہیں۔ آپ بھی ان خصوصیات کو جانیں اور اپنے اندر موجود قائدانہ صلاحیتوں کو پہچانیں۔


رضا کارانہ خدمات

ایک قائد کبھی بھی کسی کام کو چھوٹا نہیں سمجھتا۔ جب وہ دیکھتا ہے کہ اس کے لوگ یا اس کی ٹیم کوئی کام کرنے سے جھجھک رہی ہے تو وہ ہمیشہ آگے بڑھ رضاکارانہ طور پر اس کام کو سر انجام دیتا ہے۔

اس کا یہ عمل اس کی ٹیم کی حوصلہ افزائی کا سبب بنتا ہے۔


سستی اور سہل پسندی سے گریز

سستی سے کام لینا بعض اوقات کئی مسائل کا سبب بن سکتا ہے۔

ایک لیڈر ہمیشہ کاموں کو مکمل کرتا ہے، اور آنے والے وقت کے لیے بھی کئی کام پہلے سے انجام دے دیتا ہے جس کے باعث وہ کئی فائدوں کا حقدار بن جاتا ہے۔


ابلاغ کرنا

لیڈر ہمیشہ اپنے وژن اور خیالات کی ابلاغ کرتا ہے۔

اپنے آئیڈیاز کو چھپا کر کر رکھنے والا شخص کبھی بھی لیڈر نہیں بن سکتا کیونکہ نئے اور اچھوتے خیالات کے باعث ٹیم کا ہر شخص انفرادی طور پر بہترین کام کر سکتا ہے اور یہ سب مل کر ہی ایک بہترین ٹیم بناتے ہیں۔


چیزوں کی فراہمی آسان بنانا

لیڈر اپنی ٹیم کی مطلوبہ چیزوں کی فوری فراہمی آسان بناتا ہے تاکہ انہیں کام کرنے میں کسی مشکل کا سامنا نہ ہو۔


کامیابی کو تقسیم کرنا

ایک لیڈر کامیابی کا سہرا اکیلے اپنے سر نہیں لیتا۔ وہ اسے اپنی پوری ٹیم کی کاوش سمجھتا ہے اور ملنے والے فائدوں کو سب میں برابر تقسیم کرتا ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں