The news is by your side.

Advertisement

کوئٹہ، کالعدم تنظیم کا دہشت گرد گرفتار، متعدد وارداتوں کا اعتراف

کوئٹہ: بلوچستان پولیس کے محکمہ انسداد دہشت گردی فورس (کاؤنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ) نے شہر میں کارروائی کرتے ہوئے  دہشت گردی کی کئی وارداتوں اور خودکش حملوں میں ملوث کالعدم تنظیم کے کمانڈر کو گرفتار کرلیا۔

ڈی آئی جی سی ٹی ڈی اعتزاز گورایہ نے ایف سی حکام کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ کوئٹہ سے کالعدم تنظیم کے اہم دشت گرد عبدالرحیم کو گرفتار کیا گیا جو خودکش حملوں سمیت ٹارگٹ کلنگ کی کئی وارداتوں میں ملوث ہے۔

اُن کا کہنا تھاکہ پولیس نے خفیہ اطلاع پر  کارروائی کی جس کے نتیجے میں عبدالرحیم گرفتار جبکہ قبصے سے دستی بم اور پستول بھی برآمد کیا۔ اعتزاز گورایہ کا کہنا تھا کہ دہشت گرد ہزارہ ٹاؤن، آئی جی پولیس کی رہائش گاہ پر ہونے والے حملوں اور گومل یونیورسٹی کے خودکش دھماکے میں ملوث تھا، اس کے علاوہ ملزم ہزاربرادری کی ٹارگٹ کلنگ کی 9 وارداتوں میں بھی ملوث ہے۔

ڈی آئی جی سی ٹی ڈی کا کہنا تھا کہ ملزم عبدالرحیم کی گرفتاری کوئٹہ ہزارہ ٹاؤن میں ہونے والی حالیہ ٹارگٹ میں اہم پشرفت ہے کیونکہ ملزم نے کئی وارداتوں کے اعتراف کیے، دہشت گرد کے مزید ساتھیوں کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جارہے ہیں۔ اعتزاز گورایہ کا کہنا تھا کہ عبدالرحیم قانون نافذ کرنے والے اداروں کو مطلوب تھا جس کے سر کی قیمت 20 لاکھ روپے مقرر کی گئی تھی۔

یاد رہے کہ کوئٹہ میں ہزارہ برادری نے حالیہ ٹارگٹ کلنگ کے بعد شہر کے مختلف علاقوں میں بھوک ہڑتالی کیمپ لگائے ہوئے ہیں اُن کا مطالبہ ہے کہ ہمیں تحفظ فراہم کیا جائے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں