site
stats
بلوچستان

کوئٹہ : مولانا علی محمد ابو تراب بیٹے اور محافظ سمیت اغواء

کوئٹہ : مرکزی جمعیت اہلحدیث بلوچستان کے امیر مولانا علی محمد ابو تراب کو بیٹے سیکرٹری اور محافظ سمیت کوئٹہ سے اغواء کرلیا گیا، مغویان کی گاڑی لاوارث حالت میں ایئرپورٹ روڈ سے ملی ہے۔

تفصیلات کے مطابق بلوچستان کے صوبائی دارالحکومت کوئٹہ میں مرکزی جمعیت اہلحدیث بلوچستان کے امیر مولانا علی محمد ابوتراب کو بیٹے ،پرسنل سیکرٹری اور محافظ سمیت اغواء کرلیا گیا،واقعہ کی اطلاع اہل خانہ اور پولیس کو اس وقت ملی جب مغوی مذہبی رہنما کی گاڑی لاوارث حالت میں ایئرپورٹ روڈ پر کھڑی پائی گئی۔

جمعیت اہلحدیث کے رہنما عصمت اللہ سالم کے مطابق مولانا ابوتراب کوئٹہ سے کراچی جانے کیلئے اپنے بیٹے عبدالحمید ،پرسنل سیکرٹری اور سرکاری محافظ کے ہمراہ اپنی رہائش گاہ واقع سلفیہ کالونی شیخ ماندہ سے ایئر پورٹ جارہے تھے کہ ائیرپورٹ پولیس تھانہ کے قریب چاروں کو گاڑی سے اتارکر اغواء کیا گیا۔

گاڑی میں مولانا علی محمد ابو تراب کے ساتھ ان کا بیٹا عبد الحمید ،سیکرٹری عبد الستار اور ایک محافظ بھی موجود تھا۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ مغویوں کی بازیابی کیلئے کوششیں شروع کردی گئیں ہیں۔ واقعہ کی اطلاع ملتے ہی صوبائی وزیر داخلہ سمیت صوبائی وزراء اراکین اسمبلی اور سیاستدانوں کے علاوہ قبائلی شخصیات بھی مغوی رہنما کی رہائش گاہ پہنچ گئیں۔

وزیرداخلہ سرفراز بگٹی نے اس موقع پر متاثرہ خاندانوں کو یقین دلایا کہ مغویوں کی بازیابی کیلئے تمام وسائل بروئے کار لائے جارہے ہیں۔

خیال رہے کہ مولانا ابو تراب کے بھائی اور پرنسپل سلفیہ ریزیڈنشل کالج حبیب اللہ مجاہد کو بھی پانچ سال قبل اغواء کیا گیا تھا جو مبینہ طور پر تاوان کی ادائیگی کے بعد بازیاب ہوئے تھے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top