The news is by your side.

Advertisement

کوئٹہ اور گردو نواح میں بھی کومبنگ آپریشن کا آغاز

راولپنڈی : آرمی چیف کی ہدایت پر کوئٹہ اور گردو نواح میں بھی کومبنگ آپریشن کا با قاعدہ آغاز کردیا گیا ہے ۔

آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف جنرل راحیل شریف کے اعلان پر ملک بھر کے بعد کوئٹہ اور گردونواح میں بھی کومبنگ آپریشن کا شروع کردیا گیا ہے۔

سانحہ کوئٹہ کے بعد گزشتہ روز آرمی چیف نے ہدایت کی تھی کہ ملک بھر میں کومبنگ آپریشن کا آغاز کردیا گیا ہے، کومبنگ آپریشن کوئٹہ کے مضافاتی علاقوں میں کیاجا رہا ہے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق کوئٹہ میں جاری کومبنگ آپریشن میں 750جوان حصہ لے رہے ہیں جس میں پولیس کے 150 ایف سی کے 500 اہلکار جبکہ اے ٹی ایف اور سی ٹی ڈی کے 100 جوان شامل ہیں، کومبنگ آپریشن کے دوران بائیومیٹرک ڈیوائس کے ذریعے شہریوں کے کوائف کی تصدیق کی جارہی ہے۔


کورکمانڈرز اپنے صوبوں میں بھرپور کومبنگ آپریشن کریں، راحیل شریف


یاد رہے سانحہ کوئٹہ کے بعد آرمی چیف کی ہدایت کے مطابق ملک بھر میں بھر کومبنگ آپریشن کا آغاز کردیا گیا ہے، اس ضمن میں پہلا آپریشن گزشتہ روز کراچی کے علاقے سرجانی ٹاؤن میں کیا گیا جس میں 44 مشتبہ افراد کو گرفتار کیا گیا تھا جبکہ لاہور کے مختلف علاقوں 41 اشتہاری ملزمان سمیت 198 ملزمان کو گرفتار کیاگیا ہے۔


محمود آباد اور اطراف میں کومبنگ آپریشن 10 سے زائد ملزمان گرفتار


کراچی کے علاقے محمود آباد اور اطراف کے علاقوں میں پولیس نے کومبنگ آپریشن کرتے ہوئے 10 سے زائد مشتبہ افراد کو گرفتار کر کے نامعلوم مقام پر منتقل کردیا، آپریشن کے دوران علاقے کے داخلی خارجی راستوں کو سیل کرتے ہوئے ہر قسم کی آمد و رفت پر پابندی عائد کردی گئی تھی۔

ملک بھر کی طرح لاہور شہر کے مختلف علاقوں میں پولیس کا وسیع پیمانے پرسرچ آپریشن جاری جبکہ واہگہ بارڈر کے قریب بھی پولیس اور رینجرز کا سرچ آپریشن جاری ہے، فیصل آباد کے تھانہ سول لائن پولیس کا بھی لاری اڈے کے اطراف ہوٹلوں میں سرچ آپریشن جاری ہے ۔


کراچی میں پولیس کا پہلا کومبنگ آپریشن ، 44 افراد زیر حراست


اس سے قبل نوشہرہ میں پولیس کی جانب سے کومبنگ آپریشن کیا گیا جس میں 4 افغان باشندوں سمیت 21 مشتبہ افراد کو گرفتار کرکے تفتیش کے لیے نامعلوم مقام پر منتقل کردیا گیا ہے، ڈی پی او نوشہرہ کے مطابق افغان باشندوں کو فارن ایکٹ کے تحت گرفتار کیا گیا ہے۔

علاوہ ازیں شیخوپورہ پولیس نے مختلف علاقوں میں کریک ڈاؤن کرتے ہوئے 25 افراد کو گرفتار کرتے ہوئے اسلحہ برآمد کرلیا جبکہ دہشت گردی کا نشابہ بننے والے علاقے کوئٹہ میں تاحال کوئی آپریشن نہیں کیا گیا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں