The news is by your side.

Advertisement

کوئٹہ: تاجروں کا حکومتی پابندی ماننے سے انکار، کاروبار کھولنے کا اعلان

کوئٹہ: صوبائی حکومت اور تاجروں کے درمیان مذاکرات ناکام ہوگئے، جس پر تاجروں نے احتجاجا کاروبار کھولنے کا اعلان کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کوئٹہ سمیت بلوچستان کے مختلف شہروں میں لاک ڈاؤن برقرار ہے، تمام کاروباری مراکز ، شاپنگ سینٹر مکمل طور پر بند ہیں، سڑکوں پر ٹریفک کی روانی معمول سے بھی کم ہے، شہر کے داخلی اور خارجی راستوں پر عوام کی غیر ضروری نقل وحمل روکنے کے لئے پولیس نے خاردار تاریں اور رکاوٹیں کھڑی کررکھی ہے۔

گذشتہ روز کوئٹہ میں تاجروں نے لاک ڈاؤن کے خلاف مظاہرہ کیا تھا، تاجروں کے وفد نے صوبائی حکام سے ملاقات کی تھی، تاہم مذاکرات ناکام ہوئے جس پر کوئٹہ کے تاجروں نے آج پھر احتجاجی مظاہرہ کرنے کا اعلان کیا اور کاروباری مراکز کھولنے کا اعلان کیا۔

صوبائی حکومت کی جانب سے شہریوں سے اپیل کی جارہی ہے کہ وہ ایس او پیز پر عمل کریں اور غیر ضروری طور پر گھروں سے باہر نکلنے سے گریز کریں۔

کراچی کی صورت حال

شہر قائد میں کرونا کی تیسری لہر کے بعد مکمل لاک ڈاون کا آج تیسرا روز ہے، لاک ڈاؤن کے باعث کراچی کی تجارتی اور کاروباری مراکز مکمل طور پر بند ہیں، شہر میں صرف اشیائے ضررویہ کی مارکیٹ مقررہ وقت تک کھولنے کی اجازت ہے، میڈیکل اسٹور چوبیس گھنٹے کھلے رہ سکتے ہیں

شہر قائد میں پبلک ٹرانسپورٹ نہ ہونے کے برابر ہے، تاہم کچھ مقامات پر ٹھیلوں پر سامان فروخت کرتے ہوئے دکھائی دے رہے ہیں، ایس او پیز پر عملدرآمد کرانے کے لئے پولیس کی جانب سے مختلف مقامات پر ناکے لگائے گئے ہیں جو شخص بلاوجہ گھر سے نکلتا ہے یا بغیر ماسک کے سفر کرتا ہے، انہیں روک کر ماسک پہننے کی تلقین کرنے کے بعد وارننگ دے کر چھوڑ دیا جاتا ہے۔

لاہور میں بھی کاروباری مراکز کی بندش

ملک کے دیگر شہروں کی طرح لاہور میں بھی لاک ڈاؤن کا سلسلہ جاری ہے، تمام چھوٹے بڑے کاروباری مراکز مکمل طور پر بند ہیں جبکہ پولیس کی جانب سے ماسک نہ پہننے والے افراد کے خلاف کارروائی کاسلسلہ بھی جاری ہے، کرونا ایس او پیز پر عملددرآمد کرانے کے لئے پاک فوج کا شہر کے مختلف علاقوں میں گشت کیا جارہا ہے، لاہور میں مکمل لاک ڈاؤن سولہ مئی تک جاری رہے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں