The news is by your side.

Advertisement

ایم کیو ایم کا قائد متحدہ کی امریکا میں کی گئی تقریر سے بھی اظہار لاتعلقی

کراچی: ایم کیو ایم کے ڈپٹی کنوینرعامر خان نے قائد متحدہ الطاف حسین کی جانب سے امریکا میں کی گئی ایک اور متنازعہ تقریر سے اظہار لاتعلقی کا اعلان کردیا۔

تفصیلات کے مطابق عامر خان نے پی آئی بی میں واقع ایم کیو ایم کے عارضی مرکز پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا، اُن کا کہنا تھا کہ جس طرح گزشتہ روز ڈاکٹر فاروق ستار نے قائد ایم کیو ایم کی پاکستان مخالف تقریر سے اظہار لاتعلقی کیا تھا بالکل اسی طرح آج بھی رابطہ کمیٹی پاکستان امریکا میں کی گئی متنازعہ تقریر سے لاتعلقی کا اظہار کرتی ہے۔

عامر خان کا کہنا تھا کہ ’’یہ تقریر آج یا کل کی نہیں بلکہ یہ تقریر دو روز پہلے (بدھ) کے روز کی تقریر ہے کہ جب قائد متحدہ نے امریکا میں مقیم ایم کیو ایم کے کارکنان سے گفتگو پاکستان مخالف باتیں کیں تاہم یہ واضح کرنا بھی ضروری ہے کہ یہ تقریر معافی سے قبل کی گئی تھی۔

یاد رہے دو روز قبل قائد ایم کیو ایم نے کراچی پریس کلب کے باہر تادمِ مرگ بھوک ہڑتال میں بیٹھے کارکنان سے خطاب کے دوران پاکستان مخالف تقریر کی اور نعرے بھی لگائے، جس پر کچھ کارکنان نے متنازعہ تقریر پر تالیاں بجائیں اور نعرے بھی لگائے اور میڈیا ہاؤسز پر حملوں سمیت ریڈ زون میں امن و امان کی صورتحال کو خراب کیا۔

بعد ازاں قائد ایم کیو ایم نے بیرون ملک مقیم اپنے کارکنان سے خطاب بھی کیا تھا، جس کی آڈیو منظر عام پر آنے کے اراکین رابطہ کمیٹی کو ایک بار پھر تنقید کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ متحدہ سے تعلق رکھنے والے سابق خاتون اسمبلی ممبر سندھ نے اس تقریر کے حوالے سے اے آر وائی پر خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ’’اس تقریر میں مجھے ڈرایا اور دھمکایا بھی گیا ہے، جن لوگوں نے اس تقریر میں میرے حوالے سے باتیں کی اُن کے خلاف تھانے میں شکایات درج کروادی ہیں‘‘۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں