The news is by your side.

Advertisement

میچ کے دوران نسل پرستانہ الفاظ، طیب اردگان کا فرانس کیخلاف بڑا بیان

انقرہ : ترکی کے صدر رجب طیب اردگان نے کہا ہے کہ پیرس سینٹ جرمین اور استنبول باسا کسیر کے مابین چیمپئنز لیگ کے فٹ بال میچ کے دوران پیش آنے والا واقعہ فرانس میں نسل پرست رجحانات کا مظہر تھا۔

رجب طیب ایردوان نے فٹبال میچ کے دوران “نسل پرستانہ” الفاظ کے استعمال پر اپنے شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے واقعے کی سخت الفاظ میں مذمت کی۔

طیب اردگان نے اپنے ردعمل میں کہا کہ ہم کھیل اور زندگی کے تمام شعبوں میں نسلیت پرستی اور امتیاز کے خلاف ہیں، مجھے یقین ہے کہ یو ای ایف اے کی جانب سے اس بارے میں ضروری اقدامات کئے جائیں گے۔

واضح رہے کہ یو ای ایف اے چمپئینز لیگ کے ایچ گروپ کے چھٹے ہفتے میں ترکی کے میڈی پول باشاک شہر فٹبال کلب نے پیرس سینٹ جرمین کلب کے ساتھ میچ کھیلا۔

غیر ملکی خبر  رساں ادارے کے مطابق میچ میں چوتھے ایمپائر کی طرف سے باشاک شہر کلب کے نائب ٹرینر پئیر ویبو کے لئے نسلیت پرستانہ الفاظ کے استعمال کیے جس پر صدر رجب طیب ایردوان نے اپنے بیان میں سخت ردعمل کا اظہار کیا۔

سوشل میڈیا پیج سے جاری کئے گئے بیان میں صدر ایردوان نے کہا ہے کہ میں ترکی کے نمائندہ باشاک شہر کلب کی تکنیکی ٹیم سے پئیر ویبو کے لئے ادا کئے جانے والے نسلیت پرستانہ الفاظ کی شدت سے مذمت کرتا ہوں۔

انہوں نے کہا کہ یہ نقطہ نظر ناقابل معافی ہے، ہمارا عزم موقف اٹل ہے جو جاری رہے گا، فرانس ایک ایسا ملک بن گیا ہے جہاں نسل پرستانہ بیانات اور کاروائیوں کو مزید تیز کیا جاتا ہے۔

انہوں نے کہا ہے کہ مجھے یقین ہے کہ یو ای ایف اے کی طرف سے اس بارے میں ضروری اقدامات کئے جائیں گے، ہم کھیل اور زندگی کے تمام شعبوں میں نسلیت پرستی اور امتیازیت کے خلاف ہیں۔

واضح رہے کہ فٹبال میچ کے17 ویں منٹ میں ویبو نے ایک پوزیشن پر ایمپائر سے اعتراض کیا جس کے نتیجے میں انہیں چوتھے ایمپائر کے نسلیت پرستانہ طرزِ تخاطب کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

 

Comments

یہ بھی پڑھیں