آپریشن رد الفساد، سیکیورٹی فورسز کی بڑی کارروائی،10 دہشت گرد مارے گئے -
The news is by your side.

Advertisement

آپریشن رد الفساد، سیکیورٹی فورسز کی بڑی کارروائی،10 دہشت گرد مارے گئے

صوابی : آپریشن رد الفساد کے دوران سیکیورٹی فورسز کی بڑی کارروائی میں مزید دس دہشت گرد مارے گئے، صوابی میں دو روز کے دوران انجام کو پہنچنے والے ملزمان کی تعداد پندرہ ہوگئی۔

تفصیلات کے مطابق دہشت گردوں اور ان کے سہولت کاروں کے خلاف آپریشن ردالفساد کے تحت شہر شہر چھاپے اور گرفتاریاں جاری ہے، صوابی باجابائی پاس میں دہشت گردوں کے ساتھی کی اطلاع پر خفیہ ٹھکانوں پر کارروائی کی گئی اس دوران آرمی اور پولیس سے مقابلے میں دس دہشت گرد مارے گئے۔

کارروائی کے دوران تین دہشت گرد فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے، صوابی میں مختلف آپریشنز میں انجام کو پہنچنے والے ملزمان کی تعداد پندرہ ہوگئی۔


مزید پڑھیں: صوابی میں آپریشن، 5 دہشت گرد ہلاک


یاد رہے گزشتہ روز خیبر پختونخوا کے علاقے صوابی میں سیکیورٹی فورسز کے آپریشن میں پاک فوج کے کیپٹن جنید اور سپاہی امجد نے جام شہادت نوش کیا جبکہ فورسز سے فائرنگ کے تبادلے میں 5 دہشت گرد ہلاک ہوئے تھے۔

دوسری جانب پشاور میں سرچ آپریشن کے دوران بائیس مشتبہ افراد کو حراست میں لے کر تفتیش شروع کردی گئی، مالاکنڈ میدان لال قلعہ سے پولیس پر حملے میں ملوث دہشت گرد ثناء پکڑا گیا۔

کراچی اتحاد ٹاؤن سے پولیس کو مطلوب تین ملزمان جنت گل ،سعید اور دانش کو گرفتار کر لیا گیا، نیوکراچی انڈسٹریل ایریا کی کچی آبادی سے غیرقانونی مقیم دو افغان اور ایک بنگالی شہری پکڑا گیا، اندرون سندھ کندکوٹ اورتنگوانی میں پولیس اور رینجرز نے کومبنگ آپریشن میں سات ملزمان گرفتار کر کےاسلحہ برآمد کرلیا۔

شیخوپورہ سے سیکیورٹی اداروں نے آٹھ مشتبہ افراد کو حراست میں لے کر تفتیشی مرکز منتقل کردیا، کوٹ مومن سے چھ مشکوک افراد کو گرفتار کر کے اسلحہ اور منشیات برآمد کرلی گئی، پتوکی میں بڑے کریک ڈاؤن کے دوران دس ملزمان گرفت میں آئے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں