ریلوے حکام کا سابق دور حکومت کی انکوائری کے لیے نیب کو خط -
The news is by your side.

Advertisement

ریلوے حکام کا سابق دور حکومت کی انکوائری کے لیے نیب کو خط

لاہور: ریلوے میں مبینہ کرپشن اسکینڈلز کے معاملے پر ریلوے حکام نے قومی احتساب بیورو (نیب) کو خط لکھ دیا۔ ریلوے حکام نے سابق دور حکومت کی انکوائری کے لیے خط لکھا۔

تفصیلات کے مطابق ذرائع کا کہنا ہے کہ ریلوے حکام نے مبینہ کرپشن اسکینڈلز کے معاملے پر سابق دور حکومت کی انکوائری کے لیے نیب کو خط لکھا ہے۔

ذرائع کے مطابق خط میں ناقص کوالٹی کے 1800 ہارس پاور ویگن یکطرفہ بڈ میں خریدنے کا الزام لگاتے ہوئے خریداری کا مبینہ ذمہ دار سی ایم ای عدنان شفیع اور اے جی ایم انصر کو قرار دیا گیا۔

خط میں کہا گیا کہ 58 چینی لوکو موٹیو بھی سنگل بڈ میں خریدے گئے، خریداری کے ذمہ دار سی ایم ای مبین الدین، طارق اور جی ایم ٹیکنیکل شاہد احمد قرار دیے گئے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ سابق دور میں خریدے گئے انجنوں کی مرمت کا کام چینی کمپنی کو دیا گیا، ٹھیکہ دینے کے ذمہ دار موجودہ اور سابق چیئرمین کو قرار دیا گیا۔

خط میں کہا گیا کہ 30 ریلوے ٹریکس کی مرمت کا کنٹریکٹ 30 ارب میں ایک ہی کنٹریکٹر کو دیا گیا۔ خط میں کنٹریکٹر وارث انٹرنیشنل کو نوازنے کا الزام عائد کیا گیا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ 4 ہزار ہارس پاور کے 55 لوکو موٹیو امریکا سے زائد قیمت پر خریدنے کا الزام ہے جبکہ یہ لوکو موٹیو بھارت نے آدھی قیمت میں خریدے۔

خط میں درجنوں پلاٹس لیز پر آئل کمپنیوں اور با اثر شخصیات کو دینے کا الزام اور بعض افراد کو بھاری معاوضوں اور مراعات پر نوازنے کا الزام بھی عائد کیا گیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں